قصور واقعے کا ملزم چاہیے تو شہباز شریف کے گریبان میں ہاتھ ڈالیں ،ملزم باہر آ جائے ..
تازہ ترین : 1

قصور واقعے کا ملزم چاہیے تو شہباز شریف کے گریبان میں ہاتھ ڈالیں ،ملزم باہر آ جائے گا،سینئیر صحافی

قصور(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ جمعرات جنوری ء):سینئیر صحافی حبیب اکرم نے کہا کہ اب چھوٹے موٹے ملزمان کو پکڑنے سے کچھ نہیں ہوگا۔ قصور واقعے کا ملزم چاہیے تو شہباز شریف کے گریبان میں ہاتھ ڈالیں ،ملزم باہر آ جائے گا۔تفصیلات کے مطابق سینئیر صحافی حبیب اکرم نی ٹی وی پر گفتگو کر رہے تھے۔وہ زینب واقعے پر تبصرہ کرتے ہوئے جذباتی ہو گئے۔

اس موقع پر انکا کہنا تھا کہ مجھے لگتا ہے کہ آج میرے کیرئیر کا بدترین دن ہے ۔آج مجھے صحافی یا تجزیہ کار بن کر یہاں بیٹھنا نہیں چاہیے بلکہ مجھے چاہیے کہ میں اپنے گھر کے باہر دری بچھا کر بیٹھ جاوں اور آنے جانےوالوں سے تعزیت وصول کروں ،مجھے یوں لگ رہا ہے گویا یہ واقعہ میرے ساتھ رونما ہوا ہے کیونکہ زینب کی عمر بھی میری بیٹی جتنی ہی ہے۔

انکا کہنا تھا کہ اتنا بڑا سانحہ ہو گیا اور ڈی پی او کسی بات نہیں سن رہا ،اس شخص کو نہ خدا کا خوف ہے نہ حکومت کا ڈر اور نہ ہی اپنے بچوں کا خیال۔پولیس آ آکر چائے پی کر چلی جاتی ہے۔انکا کہنا تھا کہ واقعے بعد حکام نے نوٹس لینا شرع کر دیا میں سمجھتا ہوں کہ اب انکے نوٹس لینے کا وقت چلا گیا ہے ۔اب عوام کےنوٹس لینے کا وقت آ گیا ہے ۔قصور کے عوام جو کر رہے ہیں وہ بالکل ٹھیک کر رہے ہیں انکو ایسا ہی کرنا چاہیے۔انکا کہنا تھا کہ ا ب چھوٹے موٹے ملزمان کو پکڑنے سے کچھ نہیں ہو گا ۔اب ہمیں ڈی پی او کے گریبان میں ہاتھ ڈالنا ہوگا ،اب ہمیں آئی جی پولیس کو پکڑنا ہوگا انکا مزید کہنا تھاکہقصور واقعے کا ملزم چاہیے تو شہباز شریف کے گریبان میں ہاتھ ڈالیں ،ملزم باہر آ جائے گا۔
وقت اشاعت : 11/01/2018 - 22:51:52

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں