تحریک انصاف کے سینٹ انتخابات کیلئے پیپلزپارٹی اور پیپلزپارٹی کے جماعت اسلامی ..
تازہ ترین : 1
تحریک انصاف کے سینٹ انتخابات کیلئے پیپلزپارٹی اور پیپلزپارٹی کے جماعت ..

تحریک انصاف کے سینٹ انتخابات کیلئے پیپلزپارٹی اور پیپلزپارٹی کے جماعت اسلامی سے رابطے ،عمران خان کا زرداری کو فون‘ زرداری کا سراج الحق کو فون، ہارس ٹریڈنگ روکنے کیلئے صلاح مشورے،پیپلزپارٹی اچھے اقدام پر حکومت کی حمایت کرے، عمران خان،پیپلز پارٹی نے ہمیشہ جمہوریت کے لئے قربانیاں دیں اور اس کے استحکام کے لئے کوشاں بھی ہے،زرداری

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔2 مارچ۔2015ء)تحریک انصاف نے سینٹ انتخابات میں پیپلزپارٹی سے مدد مانگ لی‘ عمران خان کا آصف زرداری کو فون‘ عمران خان کے زرداری کو فون کے بعد زرداری کا امیر جماعت اسلامی سراج الحق کو فون ، سینٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ روکنے کیلئے صلاح مشورے کئے گئے۔ تفصیلات کے مطابق سینٹ انتخابات کیلئے سیاسی جماعتوں میں جوڑ توڑ کا سلسلہ اتوار کو سارا دن جاری رہا ، اسی سلسلہ میں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے سابق صدر آصف علی زرداری سے ٹیلیفونک رابطہ کرکے سینٹ انتخابات کے حوالے سے مدد مانگ لی۔

دونوں راہنماؤں نے سینٹ انتخابات کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔ پیپلزپارٹی کے سینیٹر فرحت اللہ بابر نے دونوں رہنماؤں کے درمیان رابطے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں راہنماؤں نے سینٹ انتخابات کے حوالے سے گفتگو کی۔دریں اثناء عمران خان اور زرداری کے درمیان ٹیلی فونک رابطے کے بعد سابق صدر زرداری نے امیر جماعت اسلامی سراج الحق کو ٹیلی فون کیا دونوں رہنماؤں کے درمیان خیبرپختونخوا میں ہارس ٹریڈنگ روکنے کیلئے بات چیت ہوئی ۔

واضح رہے کہ سراج الحق کے پی کے سے جماعت اسلامی اور تحریک انصاف کے سینیٹ کے لئے متفقہ امیدوار ہیں ۔ پاکستان تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان اور سابق صدر آصف زرداری کے درمیان ٹیلی فون پر رابطہ ہوا جس میں دونوں رہنماوٴں نے سینیٹ انتخابات کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا۔میڈیارپورٹ کے مطابق تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان اور سابق صدر آصف زرداری کے درمیان ٹیلی فون پر رابطہ ہوا جس میں دونوں رہنماوٴں کے درمیان سینیٹ انتخابات کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا، دوران گفتگو عمران خان کا کہنا تھا کہ ہارس ٹریڈنگ سیاستدانوں کے ماتھے پر سیاہ دھبہ ہے لہذا 22 ویں آئینی ترمیم نہ صرف سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ روکنے میں مددگار ثابت ہوگی بلکہ مستحکم جمہوریت کے لئے بھی سنگ میل ثابت ہوگی۔

ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کو چاہئے کہ وہ اچھے اقدامات پر حکومت کی حمایت کرے۔اس موقع پر سابق صدر آصف زرداری کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی نے ہمیشہ جمہوریت کے لئے قربانیاں دیں اور اس کے استحکام کے لئے کوشاں بھی ہے۔دوسری جانب دونوں جماعتوں کے درمیان یہ بحث چھڑ گئی ہے کہ فون کس نے کس کو کیا اس حوالے سے ترجمان تحریک انصاف شیریں مزاری کا کہنا ہے عمران خان کو ٹیلی فون سابق صدر آصف زرداری نے کیا جب کہ پیپلزپارٹی کے اعلامئے کے مطابق شریک چیرمین آصف زرداری کو فون تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان نے کیا۔

وقت اشاعت : 02/03/2015 - 08:50:28

اپنی رائے کا اظہار کریں