حکومت کا ایک اور کارنامہ، درآمدی ایل این جی سے بنی سی این جی مقامی سی این جی سے ..

حکومت کا ایک اور کارنامہ، درآمدی ایل این جی سے بنی سی این جی مقامی سی این جی سے 8روپے تک مہنگی ہوگئی

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔1فروری۔2015ء) نواز شریف حکومت کا ایک اور کارنامہ، درآمدی ایل این جی سے بنی سی این جی مقامی سی این جی سے 8روپے تک مہنگی ہوگئی۔تفصیلات کے مطابق دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی پیٹرول کے نرخ نیچے آر ہے ہیں۔مگر آدھی قیمت پر ملنے والی سی این جی اس وقت پیٹرول سے بھی مہنگی ہو گئی۔نواز حکومت کا ایک اور کارنامہ یہ ہے کہ کی جلد ہی درآمدی ایل این جی سے تیار سی این جی دستیا ب ہو گی جو کہ مقامی سی این جی سے آٹھ روپے فی کلو تک مہنگی ہوگی ۔

مزید یہ کہ درآمدی ایل این جی سے بنائی گئی سی این جی پر حکومت کی خاص عنایت کرتے ہوئے صرف پانچ فیصد جی ایس ٹی نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ایل این جی ماہرین کے مطابق درآمد شدہ گیس صارفین کو پچاسی روپے فی کلو جبکہ مقامی سی این جی چھیتر روپے فی کلو میں دستیاب ہے۔اس وقت ایل این جی صرف پنجاب خریدنے میں دلچسپی رکھتا ہے جبکہ سندھ نے اسے خریدنے سے انکار کر دیا ہے۔

وقت اشاعت : 01/02/2015 - 10:05:11

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں