ایران نے اپنی روایت کو توڑتے ہوئے غیر ملکی خواتین کو مردوں کے والی بال میچ دیکھنے ..
تازہ ترین : 1
ایران نے اپنی روایت کو توڑتے ہوئے غیر ملکی خواتین کو مردوں کے والی بال ..

ایران نے اپنی روایت کو توڑتے ہوئے غیر ملکی خواتین کو مردوں کے والی بال میچ دیکھنے کی اجازت دے دی،غیر ملکی خواتین کو مردوں کے والی بال میچ دیکھنے کی اجازت دے دی ہے،یہ اجازت رواں برس کی ایشین چیمپیئن شپ کے سلسلے میں دی گئی ہے، والی بال فیڈریشن

تہران( اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔30جنوری۔2015ء )ایران نے اپنی روایت کو توڑتے ہوئے غیر ملکی خواتین کو مردوں کے والی بال میچ دیکھنے کی اجازت دے دی ہے۔ اِس کا اعلان ایران کی قومی والی بال فیڈرشن کی جانب سے کیا گیا ہے۔ایران کی والی بال فیڈریشن نے اینے ایک اعلان میں غیر ملکی خواتین کو مردوں کے والی بال میچ دیکھنے کی اجازت دے دی ہے۔ یاد رہے تین ماہ قبل انٹرنیشنل والی بال فیڈریشن نے ایرانی حکام کو متنبہ کیا تھا کہ اگر ایران میں والی بال میچوں کے سلسلے میں جنسی امتیاز کی پالیسی برقرار رکھی تو اسلامی جمہوریہ ایران کو بین الاقوامی ٹورنامنٹ سے محروم کیا جا سکتا ہے۔

خیال کیا گیا ہے کہ غیر ملکی خواتین کو یہ اجازت رواں برس کی ایشین چیمپیئن شپ کے سلسلے میں دی گئی ہے۔ایران میں خواتین کو عموماً مردوں کے میچز دیکھنے کی اجازت نہیں ہے۔ حکام کے مطابق اس پابندی کی وجہ کھلاڑیوں اور شائقین میں پایا جانے والا غیر شائستہ اور غیر اخلاقی رویہ ہوتا ہے، جب وہ جذبات کی رو میں بہکتے ہوئے ناشائستہ زبان استعمال کرنا شروع کر دیتے ہیں۔

والی بال میچ کے حوالے سے جنسی امتیاز کا تنازعہ اْس وقت کھڑا ہوا تھا جب ایک برطانوی نژاد ایرانی خاتون کو تہران حکومت نے گزشتہ برس جون کے مہینے میں والی بال کے ایک میچ سے قبل اسٹیڈیم کے باہر سے گرفتار کر لیا تھا۔برطانوی نژاد۔ جون میں گرفتاری کے بعد اْسے کچھ گھنٹوں بعد رہا کر دیا گیا۔ مگر بعد میں اْسے گرفتار کر کے جیل میں ڈال دیا گیا تھا اور گزشتہ نومبر میں اْسے ضمانت پر رہا کیا گیا۔

ایرانی حکام کے مطابق غنچہ قوامی کو سکیورٹی وجوہات کی بنیاد پر حراست میں لیا گیا تھا۔ اْسی کے معاملے پر انٹرنیشنل والی بال فیڈریشن نے تہران حکومت کو متنبہ کیا تھا۔ ایرانی حکومت نے انٹرنیشنل ادارے کے برطانوی نژادخاتون کے حوالے سے پیدا خدشات کو مسترد کر دیا تھا۔ایرانی والی بال فیڈریشن کے صدر محمود افشار دوست کا کہنا ہے کہ غیر ملکی سفارت خانوں میں کام کرنے والی غیر ملکی خواتین کے علاوہ غیر ملکی ٹیموں کے ساتھ آنے والی فیملیز اور دوسری غیر ملکی خواتین جو ایران میں قیام پذیر ہیں، وہ والی بال میچوں کو دیکھنے جا سکتی ہیں۔

رواں برس ایشین والی بال چیمپیئن شپ کے دوران والی بال اسٹیڈیم کے ایک مخصوص حصے کو خواتین کے مختص کر دیا جائے گا۔ والی بال کا یہ بین الاقوامی ٹورنامنٹ اکتیس جولائی سے لیکر آٹھ اگست تک کھیلا جائے گا۔ ایران میں والی بال کھیل خاصا مقبول ہے اور گزشتہ برس والی بال کی عالمی چیمپیئن شپ میں ایرانی ٹیم کو چھٹی پوزیشن حاصل ہوئی تھی۔

وقت اشاعت : 30/01/2015 - 08:49:41

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں