مشرف کو پاکستان سے کس نے فرار کروایا؟ معروف صحافی نے اہم انکشاف کر دیا
تازہ ترین : 1

مشرف کو پاکستان سے کس نے فرار کروایا؟ معروف صحافی نے اہم انکشاف کر دیا

پرویز مشرف کو پاکستان سے باہر جانے کی اجازت سپریم کورٹ نے نہیں دی،بلکہ مشرف کو فرار کروانے کے منصوبے میں جنرل راحیل شریف کے ساتھ ساتھ شہباز شریف اور اس وقت کے اٹارنی جنرل بھی شامل تھے، معروف کالم نگار حامد میر کا دعوی

مشرف کو پاکستان سے کس نے  فرار کروایا؟ معروف صحافی نے اہم انکشاف کر ..
اسلام آباد (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔14جون 2018ء)  سپریم کورٹ  نے سابق صدر پرویز مشرف کو پاکستان واپس آنے کی صورت میں مکمل تحفظ دینے کی یقین دہانی کروائی تھی جب کہ پرویز مشرف کو الیکشن لڑنے کی بھی اجازت دے دی تھی۔۔عدالت کے اس اقدام پر سابق وزیر اعظم نواز شریف نے کئی بار تنقید کی اور کہا کہ ملک کو اندھیروں سے نکالنے والے کو نا اہل کر دیا گیا لیکن آئین توڑنے والے شخص کو الیکشن لڑنے کی اجازت دی جا رہی ہے۔

اسی متعلق معروف صحافی و کالم نگار حامد میر نے اپنے ایک کالم ’الٹا لٹکانے کے دعویدار اور پنڈی بوائے‘ میں لکھا ہے کہ آج کل نواز شریف اپنا تقابل پرویز مشرف سے کرتے ہیں۔ فرماتے ہیں جس وزیراعظم نے ملک کو ایٹمی طاقت بنایا اسے نااہل قرار دے دیا گیا اور جس شخص نے دو مرتبہ آئین توڑا اسے گرفتار نہ کرنے کی ضمانت دی جارہی ہے۔ جب نواز شریف یہ باتیں کرتے ہیں تو بھول جاتے ہیں کہ اس ’’کوچۂ جاناں‘‘ میں کچھ ایسے گستاخ موجود ہیں جو اچھی طرح جانتے ہیں کہ آئین سے غداری کے ملزم پرویز مشرف کو پاکستان سے باہر جانے کی اجازت سپریم کورٹ نے نہیں دی تھی بلکہ نواز شریف کی حکومت نے مشرف کو پاکستان سے فرار کرایا اور فرار کے اس منصوبے میں جنرل راحیل شریف کے ساتھ ساتھ شہباز شریف اور اس وقت کے اٹارنی جنرل بھی شامل تھے۔

کیا یہ سب لوگ وزیر اعظم کی مرضی کے بغیر مشرف کو پاکستان سے نکال سکتے تھے؟ مجھے اس تلخ حقیقت کا ذکر اس لئے کرنا پڑا کہ مشرف کے معاملے پر مجھے خاموشی اختیارکرنے کا مشورہ صرف جنرل راحیل شریف نہیں بلکہ نواز شریف کے قریبی ساتھی بھی دیا کرتے تھے لیکن میں نے ان کی بات نہ مان کر جن تکلیفوں کاسامنا کیا اس پر کبھی زبان نہیں کھولی۔یاد رہے کہ آج سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں سابق صدر پرویز مشرف کی طلبی سے متعلق کیس کیسماعت ہوئی۔

سپریم کورٹ نے سابق صدر پرویز مشرف کے کاغذات نامزدگی جمع کروانے کا عبوری حکم واپس لے لیا۔ سماعت کے دوران پرویز مشرف کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ پرویز مشرف واپس نہیں آرہے۔ وکیل نے کہا کہ پرویز مشرف وطن واپس آنا چاہتے ہیں لیکن موجودہ حالات اور چھٹیوں کی وجہ سے نہیں آرہے۔ جس پر سپریم کورٹ نے سابق صدر پرویز مشرف کے کاغذات نامزدگی جمع کروانے کا عبوری حکم واپس لے لیا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 14/06/2018 - 14:50:37

اس خبر پر آپ کی رائے‎