ایف بی آر نے ٹیکس وصولیوں میں مشکلات کے باعث عید الفطر کی تعطیلات کے بعد چھٹی پر ..
تازہ ترین : 1

ایف بی آر نے ٹیکس وصولیوں میں مشکلات کے باعث عید الفطر کی تعطیلات کے بعد چھٹی پر پابندی عائد کردی

ادارے کو نظرثانی شدہ ہدف حاصل کرنے کیلئے جون کے دوران ساڑھے 6سو ارب روپے کی ٹیکس وصولیاں کرنی ہیں

ایف بی آر نے ٹیکس وصولیوں میں مشکلات کے باعث عید الفطر کی تعطیلات کے ..
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 جون2018ء) فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے ٹیکس وصولیوں میں مشکلات کے باعث عید الفطر کی سرکاری چھٹیوں کے بعد تمام افسران اور اہلکاروں کیلئے چھٹی پر پابندی عائد کردی ہے۔۔ایف بی آر کی جانب سے جاری سرکلر میں کہا گیا ہے کہ ایف بی آر ہائوس اسلام آباد اور دیگر ذیلی دفاتر میں تعینات تمام افسران اور ماتحت عملے پر عید کی چھٹیوں کے بعد 19جون تا30 جون تک اضافی چھٹیاں لینے پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔

اس لئے ایف بی آر کے کسی بھی ملازم کو اس عرصے میں چھٹی نہیں دی جائے گی۔ سرکلر میں مزید کہا گیا ہے کہ جن افسران یا اہلکاروں نے پہلے ہی چھٹی حاصل کر رکھی ہے وہ بھی منسوخ تصور کی جائیں اور ملازمین 19 جون کے بعد دفتر میں حاضری کویقینی بنائیں۔۔ایف بی آر کے سرکلر میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ تمام متعلقہ حکام اس فیصلے پر عملدرآمد کو یقینی بنائیں۔

ایف بی آر کو رواں مالی سال کے بجٹ میں 4 ہزار 13 ارب روپے ٹیکس وصولیوں کا ہدف دیا گیا تھا تاہم بعد میں اس کو کم کر کی3 ہزار 9 سو 35 ارب روپے کا ہدف دیا گیا تھا۔۔ایف بی آر کے مطابق رواں مالی سال کے 11 ماہ کے دوران ایف بی آر3 ہزار 2سو 74 ارب روپے کا ٹیکس اکھٹا کیاجاسکا ہے۔اس طرح نظرثانی ہدف حاصل کرنے کیلئے جون کے دوران ساڑھے 6سو ارب روپے کی ٹیکس وصولیاں حاصل کرنا پڑیں گی جو ایک مشکل ترین ہدف ہوگا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 13/06/2018 - 16:55:54

اس خبر پر آپ کی رائے‎