غذر کے بالائی علاقوں میں اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میںہوشربا اضافے نے عوام کو ..
تازہ ترین : 1

غذر کے بالائی علاقوں میں اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میںہوشربا اضافے نے عوام کو پریشان کردیا

تحصیل پھنڈرمیں پرائس کنٹرول کمیٹی کا وجود ختم ،متعلقہ حکام صرف دفتروں تک محدود ہوکر رہ گئے

غذر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 مئی2018ء) غذر کے بالائی علاقوں میں ایک طرف اشیاء خوردو نوش کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے نے عوام کو پریشان کردیا، ہے تحصیل پھنڈرمیں پرائس کنٹرول کمیٹی کا وجود ختم ہوکر رہ گیا ہے اور متعلقہ حکام صرف دفتروں تک محدود ہوکر رہ گئے ہیں عوام کا کوئی پرسان حال نہیں جبکہ دکاندار اپنی مرضی کا مالک بنے گئے ، ان علاقوں میں ایک طرف اشیاء خوردنی کی من مانی قیمتیں وصول کی جاتی ہے تو دوسری طرف زائد المیاد اشیاء کی فروخت کا سلسلہ بھی جاری ہے انتظامیہ کی خاموشی سے غریب عوام کا کوئی پرسان حال نہیں اور لوٹ مار کرنے والوں کو کوئی لگام دینے والا نہیں غذر کی تحصیل پھنڈرکے درجنوں دکانوں میں پڑول اور ڈیزل کھلے عام فروخت ہورہا ہے ،دکانداروں کیلئے یہ ایک منافع بخش کاروبار بن گیا ،غذر ایک ایسا ڈسٹرکٹ ہے جہاں نہ تو پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی سے لوگوں کو فائدہ ملا اور نہ ہی گیس میں کوئی ریلف دی گئی غذر کے بالائی علاقوں میں گیس اب بھی دو سو دس روپے کلو کے حساب سے فروخت کی جارہی جبکہ غذر کی چاروں تحصیلوں میں پٹرول پمپوں میں پٹرول اور ڈیزل کا اتنا سٹاک نہیں ہے ،جتنا سٹاک بلیک میں کاروبار کرنیوالے افراد نے کیا ہے اور وہاں پے کھلے عام پٹرول ایک نوے اور ڈیزل ایک سو روپے میں فروخت کیا جارہا ہے مگر غذر کی انتظامیہ مکمل طور پر خاموش ہے اور لوٹ مار کا ایک نہ ختم ہونے والا سلسلہ جاری ہے اور عوام کا کوئی پرسان حال نہیں۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 16/05/2018 - 23:50:21

اس خبر پر آپ کی رائے‎

متعلقہ عنوان :