پختونوں کے حقوق کا حقوق اور حقیقی تشخص کی بحالی ہماری اوّلین ترجیحات ہیں،سکندر ..
تازہ ترین : 1

پختونوں کے حقوق کا حقوق اور حقیقی تشخص کی بحالی ہماری اوّلین ترجیحات ہیں،سکندر حیات شیرپائو

پختونوں کے حقوق کا حقوق اور حقیقی تشخص کی بحالی ہماری اوّلین ترجیحات ..
پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 مئی2018ء) قومی وطن پارٹی کے صوبائی چیئرمین سکندر حیات خان شیرپائو نے کہا ہے کہ پختونوں کے حقوق کا حصول اور حقیقی تشخص کی بحالی ہماری اولین ترجیحات ہیں ،اس مقصد کے حصول کیلئے ہماری جدوجہد جاری رہے گی، اس وقت پختونوں کو ایسی قیادت کی ضرورت ہے جو ان کے مسائل و مشکلات کو سمجھ سکتا ہواور اس کیلئے عملی جدوجہد کرنے کی اہلیت رکھتا ہو تاکہ ان کودرپیش چیلنجوںاور مسائل و مشکلات کے حل کیلئے بہتر انداز میں کر دار ادا کر سکے ،صوبائی اور مرکزی حکومتوں کی ناقص پالیسیوں اورعدم توجہ کی بدولت پختونوں اور خیبر پختونخوا میںمایوسی کی فضاء میں اضافہ ہو رہا ہے اوریہاں کے عوام احساس محرومی اور غیر یقینی کا شکار ہیں۔

وہ حلقہPK-59کے پارٹی کارکنوں کے ایک اجتماع سے خطاب کر رہے تھے۔ سکندر شیرپائو نے بے روزگاری،،مہنگائی،،توانائی بحران اور خراب طرز حکمرانی پر افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ حکمرانوں نے عوام کو اپنے ایجنڈے سے خارج کرکے اکیلا چھوڑ دیا ہے تاہم اس نازک صورتحال میں قومی وطن پارٹی عوام کے شانہ بشانہ بحرانوں پر قابو پانے سمیت امن کے قیام اور ترقی و خوشحالی کے حصول کیلئے عملی جدوجہد کرے گی۔

انھوں نے کہا کہ حکمران الیکشن وعدوں کو عملی جامعہ پہنانے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکے ہیں اور حکومت کی بے رخی کی وجہ سے عوام ان سے متنفر ہو چکے ہیں، قومی وطن پارٹی آنے والے انتخابات میں بڑی کامیابی حاصل کرکے عوام کو بھرپور ریلیف دینے سمیت ان کی مایوسی کے خاتمے کو یقینی بنائے گی۔انھوں نے کہا کہ بعض سیاسی جماعتوںنے اقتدار میں آنے کے باوجود عوام کو ریلیف دینے اور امن،ترقی اور خوشحالی کے حصول کیلئے کوئی قدم نہیں اٹھایا جس کی وجہ سے عوام کا حکمران جماعتوں سے اعتماد اٹھ چکاہے اور وہ ان سے متنفر ہو چکے ہیں۔

انھوں نے موجودہ حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ حکمرانوں کی غلط پالیسیوں اور نااہلی کی وجہ سے آسمان سے باتیں کرتی ہوئی مہنگائی ،ظالمانہ لوڈشیڈنگ بدامنی اور بے روزگاری و پسماندگی جیسے بحرانوں نے غریب آدمی کا جینا دوبھر کردیا ہے اور وہ بے یقینی کا شکار ہے، پی ٹی آئی نے الیکشن 2013میں تبدیلی اور اچھی حکمرانی قائم کرنے کے دعوے کئے لیکن صوبہ میں جاری بد انتظامی،پسماندگی اور عوامی مسائل و مشکلات ان وعدوں کی نفی کرتی ہے اوران کی غلط پالیسیوں کی بدولت پختونوں کو ملکی اور بین الاقوامی سطح پر جائز مقام اورتشخص نہیں ملاجس کی وجہ سے وہ کسمپرسی کی حالت میں زندگی گزارنے پر مجبور ہیںجبکہ پختونوں نے ہمیشہ ملک کے تحفظ ،ترقی،بقا اور خوشحالی کیلئے بڑی قربانیاں دیں ہیں اور ہر آڑے وقت میں اپنا موثر کردار ادا کیا ہے ۔

اس موقع پر قومی وطن پارٹی کے رہنماء الحاج ہاشم خان،ارشد خان عمرزئی ایم پی اے،عارف پراچہ اور طارق خان کلاڈھیر بھی موجود تھے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 16/05/2018 - 21:27:28

اس خبر پر آپ کی رائے‎