لاہور ہائیکورٹ نے نواز شریف اور مریم نواز کی عدلیہ مخالف تقاریر پر پیمرا کو 15روز ..
تازہ ترین : 1

لاہور ہائیکورٹ نے نواز شریف اور مریم نواز کی عدلیہ مخالف تقاریر پر پیمرا کو 15روز میں فیصلہ کرنے کا حکم

اس دوران عدلیہ مخالف تقاریر نشرنہ کی جائیں، پیمرا 15روز میں عدلیہ مخالف تقاریر کا سختی سے نوٹس اور تمام ٹی وی چینلز کی خود نگرانی کرے،لاہور ہائیکورٹ کا نواز شریف اور مریم نواز کی عدلیہ مخالف تقاریر پر فیصلہ

لاہور ہائیکورٹ نے نواز شریف اور مریم نواز کی عدلیہ مخالف تقاریر پر ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 اپریل2018ء) لاہور ہائیکورٹ نے نواز شریف اور مریم نواز کی عدلیہ مخالف تقاریر پر پیمرا کو 15روز میں فیصلہ کرنے کا حکم دے دیا، اس دوران عدلیہ مخالف تقاریر نشرنہ کی جائیں، پیمرا 15روز میں عدلیہ مخالف تقاریر کا سختی سے نوٹس لے، پیمرا تمام ٹی وی چینلز کی خود نگرانی کرے۔ پیر کو لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس مظاہر علی اکبر کی سربراہی میں 3رکنی بینچ نے نواز شریف اور مریم نواز کی عدلیہ مخالف تقاریر کے معاملے پر فیصلہ سناتے ہوئے پیمرا کو حکم دیا کہ پندرہ روز کے اندر نواز شریف اور مریم نواز سمیت 16حکومتی شخصیات کی عدلیہ مخالف تقاریر پر فیصلہ کرے۔

اس دوران عدلیہ مخالف تقاریر نشر نہ کی جائیں، 15روز میں فیصلہ کر کے پیمرا رپورٹ عدالت میں پیش کرے۔ پیمرا تمام ٹی وی چینلز کی خود نگرانی کرے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 16/04/2018 - 18:35:04

اس خبر پر آپ کی رائے‎