حکومت چکوال میں ٹورازم کی فروغ کے لئے موثر مارکیٹنگ کے ساتھ ساتھ ضروری سہولیات ..
تازہ ترین : 1

حکومت چکوال میں ٹورازم کی فروغ کے لئے موثر مارکیٹنگ کے ساتھ ساتھ ضروری سہولیات کی فراہمی یقینی بنائے،میاں زاہد حسین

بیڈشیٹ، ڈیری پروڈکٹس، جپسم پراسیسنگ، الیکٹریکل پروڈکٹس، لیدر ، پلاسٹک اور اسٹیل کی صنعتوں میں سرمایہ کاری کے مواقع موجود ہیں،صدر انڈسٹریل الائنس

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 اپریل2018ء)پاکستان بزنس مین اینڈ انٹلیکچولز فور م وآل کراچی انڈسٹریل الائنس کے صدر ،بزنس مین پینل کے سینئر وائس چیئر مین اور سابق صوبائی وزیر میاں زاہد حسین نے کہاہے کہ ضلع چکوال پنجاب کے دیگر اضلاع کی طرح کاٹن کی فراہمی اور اس سے وابستہ صنعتوں میں خاص مقام رکھتا ہے مگر یہ صنعت وسعت اور پوٹینشل رکھنے کے باوجود ترقی سے دور ہے، جس کے لئے خصوصی توجہ کی ضرورت ہے۔

چکوال کے اسمال انڈسٹریز میں ایمبرائیڈری، فرنیچر، وڈورک، کلے کراکری، فائرورک وغیرہ قابل ذکر ہیں۔ میاں زاہد حسین نے بزنس کمیونٹی سے گفتگو میںکہاکہ چکوال میں مختلف صنعتوں میں سرمایہ کاری کے بے تحاشہ مواقع موجود ہیںجن میں بیڈشیٹ، کولڈ اسٹوریج، لائیواسٹاک فارمنگ، ڈیری پروڈکٹس، الیکٹریکل پروڈکٹس، جپسم پراسیسنگ، لیدر پروڈکٹس، پلاسٹک اور اسٹیل کی صنعتیں شامل ہیں۔

زرعی مصنوعات میں مونگ پھلی، سرسوں، زیتون اور کئی سبزیاںشامل ہیں۔ چکوال کے اطراف سے اصلی شہد بھی وافر مقدار میں مہیا ہوتا ہے، ان صنعتوں میں سرمایہ کاری کی جاسکتی ہے۔ میاں زاہد حسین نے کہا کہچکوال M-2موٹروے سے منسلک ہے اور سی پیک کے ویسٹرن کوریڈور سے اس ضلع اور اطراف کے علاقوں کو منسلک کیا جارہا ہے، جس سے یہ علاقہ ترقی کرے گا اور یہاں کی پیداوار بآسانی ملکی اور غیر ملکی منڈیوں تک پہنچائی جاسکیں گی۔

چکوال ملک بھر میں بہترین افرادی قوت اور اعلیٰ فوجی شخصیات کی وجہ سے جانا جاتا ہے۔ شہر میں تین یونیورسٹیاں ہیں اور تعلیم کی شرح بہتر ہے۔ مقامی پیداوار کو بہتر کرنے اور انٹرنیشنل مارکیٹس میں مقامی پیداوار کی طلب بڑھانے کے لئے شہر میں موجود یونیورسٹیاںریسرچ کریں ۔ میاں زاہد حسین نے کہا کہ چکوال چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے عہدیداران مقامی صنعت و تجارت کو ترقی دینے کے لئے علاقے کے با اثر سیاسی اور سرکاری شخصیات اور یونیورسٹیوں کی انتظامیہ کے ساتھ مل کر کام کریں، اس سلسلے میں پی بی آئی ایف ہر ممکن تعاون کا یقین دلاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مل کر کام کرنے سے نہ صرف یہ شہر اور یہاں کے لوگ ترقی کرینگے بلکہ ملکی معیشت کی بہتری میں چکوال انتہائی موثر کردار ادا کرسکتا ہے۔ میاں زاہد حسین نے کہا کہ چکوال میں بہترین ٹورسٹ اٹریکشن اسپاٹس جن میں باغ صوفہ، تخت بابری، مشہور مزارات، باغات اور ماونٹین رینجز شامل ہیں،جنکی طرف سیاحوں کو راغب کرنے کے لئے موثر مارکیٹنگ کے ساتھ ساتھ بہتر سہولیات کی فراہمی کی ضرورت ہے، حکومت اس سلسلے میں اقدامات کرے۔

کٹاس راج کا قلعہ اور آنسو جھیل ہندو اور سکھوں کے لئے متبرک مقامات کی حیثیت رکھتے ہیں قلعہ کے اوپر شیوا کا بلند ترین مندر اور اطراف میں ہندوئوں کے 8جبکہ سکھوں کی کئی عبادت گاہیں موجود ہیں۔شہر کے اطراف میں کئی چھوٹے ڈیمز کی موجودگی شہر کے قدرتی حسن میں اضافہ کرتے ہیں۔ حکومت چکوال اور اطراف کے علاقوں میں ٹورازم کی ترقی کے لئے اقدامات کرکے سرمایہ کاری کے مواقع پیدا کرسکتی ہے بلکہ بیرون ملک سے آنے والے سیاحوں کے ذریعے سے کثیر زرمبادلہ بھی کماسکتی ہے۔
وقت اشاعت : 16/04/2018 - 16:50:07

اس خبر پر آپ کی رائے‎