صدر مملکت ممنون حسین سے ملائیشین رائل نیوی کے سربراہ ایڈمرل تان سری احمد قمرالزمان ..
تازہ ترین : 1

صدر مملکت ممنون حسین سے ملائیشین رائل نیوی کے سربراہ ایڈمرل تان سری احمد قمرالزمان ایچ جے احمد بدرالدین کا ملاقات

پاکستان اور ملائیشیا کے درمیان مثالی برادرانہ تعلقات ہیں، ’’آسیان‘‘ کی مکمل ڈائیلاگ پارٹنر شپ کے حصول کیلئے ملائیشیا کا پاکستان کا ساتھ دینے شکر گزار ہیں، صدر مملکت ممنون حسین

صدر مملکت ممنون حسین سے ملائیشین رائل نیوی کے سربراہ ایڈمرل تان سری ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 فروری2018ء) صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ پاکستان نے دہشت گردی کی کمر توڑ دی ہے، اب بچے کھچے دہشت گرد سرحد پار سے پاکستان آ رہے ہیں جس کی روک تھام کیلئے پاک۔افغان سرحد پر باڑ تعمیر کی جا رہی ہے جس کے نتیجہ میں جلد ہی اس خطے میں دہشت گردی کا مکمل طور پر خاتمہ ہو جائے گا۔ اس سلسلے میں پاکستان افغانستان حکومت کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہے۔

انہوں نے یہ بات ملائیشیا کی رائل نیوی کے سربراہ ایڈمرل تان سری احمد قمرالزمان ایچ جے احمد بدرالدین سے پیر کو ملاقات میں کہی۔ اس سے قبل صدر مملکت نے ایک پروقار تقریب میں انھیں نشانِ امتیاز (ملٹری) بھی عطا کیا۔ تقریب میں ملائیشیا کے سفیر اکرام بن محمد ابراہیم اورچیف آف نیول سٹاف ایڈمرل ظفر محمود عباسی کے علاوہ اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔

صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان اور ملائیشیا کے درمیان مثالی برادرانہ تعلقات ہیں، ہمیں خوشی ہے کہ ’’آسیان‘‘ کی مکمل ڈائیلاگ پارٹنر شپ کے حصول کیلئے ملائیشیا نے ہمیشہ پاکستان کا ساتھ دیا جس پر ہم اس کے شکر گزار ہیں۔ صدر مملکت نے دونوں ممالک کی بحریہ کے درمیان پیشہ ورانہ تعاون پر مسرت کا اظہار کیا اور خواہش کا اظہارکیا کہ ان تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کیلئے اعلیٰ سطح کے وفود کا تبادلہ جاری رہنا چاہئے۔

صدر مملکت نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف آپریشن ’’ضرب عضب‘‘ اور ’’ردالفساد‘‘ کامیاب رہے ہیں اور ملک سے دہشت گردوں کا خاتمہ ہو گیا ہے۔ اب سرحد پار سے دہشت گردی کا سلسلہ جاری ہے جس کی روک تھام کیلئے افغان حکومت سے بات چیت جاری ہے۔ صدر مملکت نے کہا کہ ہماری مسلح افواج کو انسداد دہشت گردی کا خصوصی تجربہ ہے اور اب وہ اس سلسلے میں دوست ممالک کو تربیت بھی فراہم کر سکتی ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 19/02/2018 - 17:59:20

اس خبر پر آپ کی رائے‎