احتساب عدالت نے جے آئی ٹی سربراہ واجد ضیا 22 فروری کوریکارڈ سمیت طلب کر لیا
تازہ ترین : 1

احتساب عدالت نے جے آئی ٹی سربراہ واجد ضیا 22 فروری کوریکارڈ سمیت طلب کر لیا

واجد ضیاپہلی بار نواز شریف کی موجودگی میں عدالت میں پیش ہوں گے

احتساب عدالت نے جے آئی ٹی سربراہ واجد ضیا 22 فروری کوریکارڈ سمیت طلب ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 فروری2018ء) احتساب عدالت نے شریف خاندان کیخلاف ریفرنس میں پاناما لیکس کی جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیا کو ریکارڈ سمیت 22 فروری کو طلب کرلیا،پہلی بار نواز شریف کی موجودگی میں عدالت میں پیش ہوں گے۔ تفصیلات کے مطابق شریف خاندان کیخلاف ایون فیلڈ پراپرٹیز ریفرنس میں اہم پیش رفت سامنے آئی ہے۔ اسلام آباد کی احتساب عدالت نے پاناما لیکس کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم ( جے آئی ٹی)کے سربراہ واجد ضیا کو ریکارڈ سمیت طلب کرلیا ہے۔

نیب کے پراسیکوٹر کی استدعا پر واجد ضیا کو 22 فروری کو طلب کیا گیا ہے۔ نیب نے کہا کہ ریفرنس کی سماعت میں ویڈیو لنک پر دو گواہوں کے بیانات قلمبند کرنے کے لیے اصل ریکارڈ سامنے ہونا ضروری ہے۔احتساب عدالت نے حکم دیا کہ واجد ضیا 22 فروری کو جے آئی ٹی کے اصل ریکارڈ کے ہمراہ پیش ہوں۔ عدالت نے نواز شریف،، مریم نواز اور کیپٹن(ر)صفدر کو بھی حاضری یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے۔ واجد ضیا پہلی بار نواز شریف کی موجودگی میں عدالت میں پیش ہوں گے۔واضح رہے کہ پاناما لیکس کیس میں سپریم کورٹ کے حکم پر شریف خاندان کے خلاف کرپشن کی تحقیقات کے لیے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم(جے آئی ٹی)تشکیل دی گئی تھی جس کا سربراہ ایف آئی اے کے ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل واجد ضیا کو بنایا گیا تھا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 19/02/2018 - 17:42:52

اس خبر پر آپ کی رائے‎

متعلقہ عنوان :