سعودی عرب ،کام کرنے کےاوقات میں کمی ، ہفتے میں دو روزہ چھٹی
تازہ ترین : 1

سعودی عرب ،کام کرنے کےاوقات میں کمی ، ہفتے میں دو روزہ چھٹی

سعودی عرب  ،کام کرنے کےاوقات میں کمی  ، ہفتے میں دو روزہ چھٹی
ریاض (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 فروری2018ء)  مقامی ذرائع کے مطابق سعودی مجلس شوریٰ نے نجی کمپنیوں و اداروں میں اوقات کار میں کمی اور ہفتے میں 2دن کی چھٹی کی حمایت کردی۔ 84ارکان شوریٰ نے قانون محنت میں ترمیم کے حق میں ووٹ دیدیئے۔ شوریٰ نے یہ شرط عائد کی ہے کہ اوقات کار میں ترمیم اور ہفتے میں 2دن کی چھٹی کا اختیار کابینہ کے پاس رہے۔قانون محنت میں ترمیم کے تحت ہفتے کے اوقات کار کم از کم 40 گھنٹے ہونگے۔

ہفت روزہ چھٹی میں ایک دن کا اضافہ ہوگا۔ ملازمین کو اسکی مکمل تنخواہ ملے گی۔ اس ترمیم کا تعلق سعودیوں کیلئے مخصوص پیشو ںپر کام کرنے والوں سے ہوگا۔شوریٰ نے قانون محنت میں متعد د ترامیم کی تائید و حمایت کی ہے۔ نمایاں ترین ترمیم یہ کی گئی ہے کہ مجلس الوزراءبعض پیشو ںپر کام کرنے والوں کی ڈیوٹی کے اوقات میں کمی کا اختیار اپنے پاس رکھے گی۔

خصوصاً ان پیشوں پر کام کرنے والوں کے اوقات کار میں کمی ہوگی جو سعودیوں کیلئے مخصوص کردیئے گئے ہیں۔اسکے حق میں 84 ووٹ آئے۔ حکومت نے تجویز پیش کی تھی کہ کسی بھی کارکن سے روزانہ 8 گھنٹے سے زیادہ ڈیوٹی نہیں لی جاسکتی بشرطیکہ آجر ہفتے میں اوقات کار 48 گھنٹے متعین کرے یا یومیہ کے تناسب سے اوقات کار کا فیصلہ کرے۔ ایک اورترمیم میں واضح کیا گیا ہے کہ جمعہ کا دن تمام کارکنان کی ہفت روزہ چھٹی کا دن ہوگا۔ سعودی کابینہ ہفتے میں ایک دن کی تعطیل کا اضافہ مخصوص پیشوں پر کام کرنے والوں کیلئے کرسکے گی۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 13/02/2018 - 16:43:46

اس خبر پر آپ کی رائے‎

متعلقہ عنوان :