17جنوری کو احتجاج کے آخری رائونڈ کا آغاز ہو رہا ہی: ڈاکٹر طاہر القادری
تازہ ترین : 1

17جنوری کو احتجاج کے آخری رائونڈ کا آغاز ہو رہا ہی: ڈاکٹر طاہر القادری

چیف جسٹس نے حقائق بیان کئے،ڈیڑھ سو سال پرانے قانون سے ملک نہیں چل سکتا بھینسوں کے انجکشن کے معاملات بھی عدلیہ نے دیکھنے ہیں تو کیا حکمران صرف حرام خوری کے لیے ہیں شہداء کے انصاف کے لیے سب جماعتیں ایک پیج ایک سٹیج پر ہونگی:اشرافیہ کا خاتمہ مہینوں نہیں دنوں کی بات ہے،سینئر راہنمائوں کے اجلاس سے خطاب

17جنوری کو احتجاج کے آخری رائونڈ کا آغاز ہو رہا ہی: ڈاکٹر طاہر القادری
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 جنوری2018ء) پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہرا لقادری نے کہا ہے کہ 17جنوری سے احتجاج کے آخری رائونڈ کا آغاز ہورہا ہے ، سسٹم نام کی کوئی چیز ہوتی تو سانحہ ماڈل ٹائون کے قاتل پھندوں پر جھول چکے ہوتے، چیف جسٹس نے چشم کشا حقائق سے پردہ اٹھایا ، ڈیڑھ سو سال پرانے قوانین سے پاکستان نہیں چل سکتا، 1860کے قانونی ڈھانچے کو لوٹ مار کے کھلے مواقع ملنے کے سبب مکمل ختم نہیں کیا گیا، وہ گذشتہ روز پاکستان عوامی تحریک کے سینئر راہنمائوں کے اجلاس سے خطاب کر رہے تھے، ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ 3 دہائیوں سے سسٹم کے کھوکھلے پن کو بے نقاب کر رہے ہیں خوشی ہے کہ اب اس ملک کے ذمہ دار لوگ بھی استحصالی رویوں کے خلاف کھل کر بو ل رہے ہیں،دعا ہے ملک اور قوم کی استحصالی نظام اور قوانین سے جلد سے جلد جان چھوٹ جائے، پارلیمنٹ نے اپنے حصے کا کام کیا ہوتا اور افراد کی بجائے اداروں کو مضبوط بنایا گیا ہوتا تو آج ملک افراتفری کا شکار نہ ہوتا،انہوں نے کہا کہ بھینسوں کے انجکشن مضر صحت پانی، ناقص خوراک، تعلیم اور ہسپتالوں کے معمول کے مسائل عدالتوں نے حل کرنے ہیں تو کیا حکمران صرف حرام خوری کے لیے ہیں جب حکومتیں، اسمبلیاں اپنے حصے کا کام نہیں کریں گی تو پھر یہ کام کوئی تو کرنے آئے گا۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف ہوں یا شہباز شریف دونوں جمہوریت کے قائل نہیں،وہ کاروبار کے عالمگیر فروغ کے لیے سیاست میں آئے، وہ جس مقصد کے لیے آئے تھے وہ کام انہوں نے ہر روز کیا، انہوں نے کہا کہ پاکستان کو بچانا ہے تو استحصالی نظام اور کرپٹ اشرافیہ کو نکالنا ہوگا، حکومت کے خاتمے کا مطلب ہرگز جمہوریت کا خاتمہ نہیں ہوگا،اس کا مطلب لوٹ مار اور بادشاہی نظام کا خاتمہ ہوگا،ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ 17جنوری کے احتجاج کے لیے عوامی تحریک پوری طرح تیار ہے ،تمام جماعتیں شہدائے ماڈل ٹائون کو انصاف دلوانے کے لیے ایک پیج اور سٹیج پر ہوں گی۔

انہوں نے کہا کہ 17جنوری کے احتجاج کی حیثیت گلدستہ کی ہوگی، تمام جماعتوں کے کارکن، عہدیدار ایک دوسرے کو عزت و احترام دیں، اعلیٰ اخلا ق کا مظاہرہ کریں، کسی ایک پھول کی ٹہنی سے دوسرے پھول کی ٹہنی کو ضرب نہ آئے، انہوں نے کہا کہ اشرافیہ کے اقتدار کا خاتمہ مہینوں نہیں دنوں کی بات ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 13/01/2018 - 22:12:06

اس خبر پر آپ کی رائے‎

The last round of protests on January 17 began: Dr. Tahir-ul-Qadri Chief Justice described the facts, the country can not go through the law forty and a half years old If the judiciary is seen in cases of injection of the buffalo, then are the rulers only for harassment? For the justice of the martyrdom, all parties will be on one stage at one stage: the elimination of elite is not a matter of days, addressing the senior leaders' meeting.

Pakistan Tehrik-e-Insaf (PTI) leader Dr Tahira Vajpayee said that the last round of protests since January 17 is going on, there would have been a systematic name of the system name, the tragedy would have been swollen on the killer festivals of the Model Town, the Chief Justice raised the veil facts. He could not walk to the old laws of the past two hundred and a half years, the 1860 legal structure was not completed due to the open opportunities, he was addressing the senior leaders of Pakistan Peoples Party last day, Dr Tahir-ul-Qadri It has been said that the system is exposing the hollow pin for the past three decades, and now it is responsible for this country. Wigs are also spreading against exploitation behavior, praying the country and nation's exploitation system and rules should be eliminated as soon as possible, Parliament would have done its part and instead of people, institutions would have been strengthened. Today the country would not suffer chaos, he said that the problems of injection-free health, poor food, education and hospitals of the hospitals are to be resolved by the courts; are the rulers only for harassment when governments, assemblies If you do not work, then it will be done to do something

Related : Protest, Muhammad Tahir Ul Qadri, Doctor