زینب زیادتی کیس کے بعد پولیس کے ہاتھوں دوران احتجاج قتل کر دیے جانے والے شخص کے ..
تازہ ترین : 1

زینب زیادتی کیس کے بعد پولیس کے ہاتھوں دوران احتجاج قتل کر دیے جانے والے شخص کے اہل خانہ نے پنجاب حکومت سے معاوضہ لینے سے انکار کر دیا

زینب زیادتی کیس کے بعد پولیس کے ہاتھوں دوران احتجاج قتل کر دیے جانے ..
قصور (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔13 جنوری 2018ء) زینب زیادتی کیس کے بعد پولیس کے ہاتھوں دوران احتجاج قتل کر دیے جانے والے شخص کے اہل خانہ نے پنجاب حکومت سے معاوضہ لینے سے انکار کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق قصور میں ننھی پری زینب کو زیادتی کے بعد قتل کر دیے جانے کے دل دہلا دینے واقعے کے بعد شہریوں کی جانب سے کیے جانے والے احتجاج پر پولیس نے فائرنگ کرکے 2 افراد کو قتل کر دیا تھا۔

پنجاب حکومت کی جانب سے جاں بحق افراد کے اہل خانہ کیلئے 30 لاکھ روپے معاوضے کا اعلان کیا گیا تھا۔ تاہم جاں بحق ہونے والے ایک شخص علی کے اہل خانہ نے پنجاب حکومت کے اعلان کو مسترد کر دیا ہے۔ جاں بحق ہو جانے والے شخص علی کے اہل خانہ نے معاوضہ لینے سے انکار کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ انہیں پیسے نہیں انصاف فراہم کیا جائے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 13/01/2018 - 20:19:45

اس خبر پر آپ کی رائے‎

The family of the person who was protesting in the hands of police after the Zainab abducted case refused to get compensation from the Punjab government.

The family of the person who has been protesting during the police hands after the Zainab abducted case has refused to pay compensation from the Punjab government. According to details, police opened fire and killed 2 people on protest by the citizens after the incident of killing of innocent fairy men after being abused.

Related : Murder, Protest, Police, Punjab

متعلقہ عنوان :