اب بچوں کے ساتھ زیادتی کے جائے وقوع سے 2کلو میٹر تک تمام افراد کا ڈی این اے ٹیسٹ ..
تازہ ترین : 1

اب بچوں کے ساتھ زیادتی کے جائے وقوع سے 2کلو میٹر تک تمام افراد کا ڈی این اے ٹیسٹ ہو گا

اب بچوں کے ساتھ زیادتی کے جائے وقوع سے 2کلو میٹر تک تمام افراد کا ڈی ..
لاہور(اردو پوائنٹ تازہ اخبار ۔ 13 جنوری 2018) بچوں کے تحفظ کے لیے قائم کمیٹی کا کام شروع،سی ایم کیٹی کی ابتدائی سفارشات تیار،بچے سے زیادتی پر2 کلو میٹر پر تمام افراد کا ڈی اینااے ٹیسٹ ہو گا۔تفصیلات کے مطابق بچو ں کے تحفظ کے لئے قائم کمیٹی نے کام شروع کر دیا۔ جب کہ ابتدائی رپورٹ 15 جنوری کو پیش کی جائے گی۔کہا گیا ہے کہ اس سے متعلق کام اب ترقی یافتہ ممالک کی طرز پر ہو گی ۔جب کہ کسی بھی جگہ اگر کسی بچے کے ساتھ زیادتی کا واقعہ پیش آئے گا تو اس جگہ سے 2 کلومیٹر کے فاصلے تک سب افراد کا ڈی این اے ٹیسٹ ہو گا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

اس خبر نوں پنجابی وچ پڑھو
وقت اشاعت : 13/01/2018 - 15:47:36
All children will be DNA test from the time of abortion with 2 kms

The committee set up for the protection of children starts, the initial recommendations of SM Katy will be prepared, the test will be done for all people at 2 kilometer on child abuse. According to the details, the committee formed to protect the survivors started work Given. When the preliminary report will be presented on January 15. It has been said that its work will now be on the style of developed countries.

Related : Pakistan International Airlines, Social Media

متعلقہ عنوان :