دہشت گردی کے خلاف جنگ صرف ڈالروں سے نہیں لڑی جا سکتی‘
تازہ ترین : 1

دہشت گردی کے خلاف جنگ صرف ڈالروں سے نہیں لڑی جا سکتی‘

افغانستان میں امریکہ اپنی ناکامی کا ذمہ دار ہمیں نہیں ٹھہرا سکتا ‘ ہم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بھاری نقصان اٹھایا‘ صلہ الزام تراشی کی صورت میں دیا گیا، دوستوں اور اتحادیوں کا امتحان نہیں دیا جاتا، وزیر خارجہ خواجہ آصف نے اپنے بیان

دہشت گردی کے خلاف جنگ صرف ڈالروں سے نہیں لڑی جا سکتی‘
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 جنوری2018ء)وزیر خارجہ خواجہ آصف نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ صرف ڈالروں کی بنیاد پر نہیں لڑی جا سکتی‘ افغانستان میں امریکہ اپنی ناکامی کا ذمہ دار ہمیں نہیں ٹھہرا سکتا ‘ ہم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بھاری جانی نقصان اٹھایا‘ صلہ الزام تراشی کی صورت میں دیا گیا۔ دوستوں اور اتحادیوں کا امتحان نہیں دیا جاتا۔

ہفتہ کو وزیر خارجہ خواجہ آصف نے اپنے بیان میں کہا کہ افغانستان کے حوالے سے گیند امریکہ کے کورٹ میں ہے۔ دوستوں اور اتحادیوں کا امتحان نہیں لیا جاتا۔ سنجیدگی انہیں ظاہر کرنی ہے۔ ہم اپنی ذمہ داری پوری کر رہے ہیں۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ صرف ڈالروں کی بنیاد پر نہیں لڑی جا سکتی۔ افغانستان میں امریکہ اپنی ناکامی کا ذمہ دار ہمیں نہیں ٹھہرا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان پر الزام کی روش ترک کرنا ہو گی۔ ہم نے بھاری جانی و مالی نقصان اٹھایا۔ صلہ الزام تراشی سے دیا گیا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 13/01/2018 - 15:32:15

اس خبر پر آپ کی رائے‎

The war against terrorism can not be fought only for dollars, 'America in Afghanistan can not hold us responsible for our failure'. We have suffered a lot of losses in the war against terrorism. 'The slaughter was given in case of accusation, friends and allies The examination is not given, Foreign Minister Khawaja Asif said his statement

Foreign Minister Khawaja Asif said that the fight against terrorism can not be fought only on the basis of dollars, 'America in Afghanistan can not hold us responsible for our failure'. We have suffered heavy casualties in the fight against terrorism. In case of blame. Friends and allies are not examined

Related : USA, Afghanistan, Damage, Loss, Khawaja Asif