نجی میڈیکل کالجز 6لاکھ 45ہزارروپے سالانہ سے زائد فیس وصول نہیں کرسکیں گے ۔چیف جسٹس ..
تازہ ترین : 1

نجی میڈیکل کالجز 6لاکھ 45ہزارروپے سالانہ سے زائد فیس وصول نہیں کرسکیں گے ۔چیف جسٹس

نجی میڈیکل کالجز 6لاکھ 45ہزارروپے سالانہ سے زائد فیس وصول نہیں کرسکیں ..
کراچی(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔13 جنوری۔2018ء)نجی میڈیکل کالجوں میں داخلوں سے متعلق چیف جسٹس نے کہا کہ پی ایم ڈی سی کا کیا طریقہ کار ہے، ہم معیار طے کریں گے، ہم ایڈمیشن منسوخ نہیں کر رہے لیکن پی ایم ڈی سی مزید کسی کالج کو رجسٹرڈ نہیں کرے گا، ہم اس پورے معاملے کا جائزہ لے رہے ہیں۔کراچی میں میڈیکل کالجوں سے متعلق کیس کی سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں سماعت ہوئی، سماعت کے دوران عدالت نے حکم جاری کیا کہ جن میڈیکل کالجزمیں داخلے دیے گئے ہیں وہاں فیس 6لاکھ 45ہزارروپے سالانہ سے زائدنہ لی جائے۔

عماعت کے موقع پر معزز جج نے نجی کالج کے مالکان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ التجا سمجھیں، بڑے بھائی کی بات سمجھیں یا حکم، انسپکشن ٹیم جائے گی تو پھر کوئی رعایت نہیں ملے گی۔سماعت میں یہ بھی کہا گیا کہ عدالتی کارروائی مکمل ہونے تک یہ احکامات پورے ملک پر لاگو ہوں گے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 13/01/2018 - 13:03:09

اس خبر پر آپ کی رائے‎

Medical colleges will not be able to receive more than 6 lakh 45 thousand rupees annually. Chief justice

The Chief Justice regarding the entry into private medical colleges said that what is the procedure of PMDC, we will determine the standards, we are not canceling the admission, but the PMDC will not register any further college. The Supreme Court was hearing the case regarding medical colleges in the Karachi colleges. During the hearing, the court ruled that the medical colleges who have been admitted there will be a total of 6 lakh 45 thousand rupees annually.

Related : Chief Justice

متعلقہ عنوان :