بچوں ،خواتین کے ساتھ زیادتی کے واقعا ت میں پولیس کاروائی میں تاخیر کسی صورت برداشت ..
تازہ ترین : 1

بچوں ،خواتین کے ساتھ زیادتی کے واقعا ت میں پولیس کاروائی میں تاخیر کسی صورت برداشت نہیں‘کیپٹن (ر) عارف نواز

بچوں پر جنسی تشدد کے کیسز میں کاروائی میں تاخیری حربے استعمال کرنے والے افسران و اہلکاروں کے خلاف کارروائی میں قطعی کوئی دیر نہ کی جائے‘احتجاج، ہنگاموں یا کسی بھی ایمر جنسی صورتحال سے نبرد آزما ہونے کیلئے اینٹی رائٹس فورس کی تربیت ،استعداد کار کو بڑھانے کیلئے بھرپور اقدامات کئے جائیں ‘آئی جی پنجاب کا آرپی اوز ، ڈی پی اوز کانفرنس سے خطاب

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جنوری2018ء)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب کیپٹن (ر) عارف نواز خان نے کہا ہے کہ بچوں اور خواتین کے ساتھ زیادتی کے واقعا ت میں پولیس کاروائی میں تاخیر کسی صورت برداشت نہیںایسے جرائم کا ارتکاب کرنے والے ملزمان کی فوری گرفتاری کو ترجیحی بنیادوں پر یقینی بنایا جائے اور بچوں پر جنسی تشدد کے کیسز میں کاروائی میں تاخیری حربے استعمال کرنے والے افسران و اہلکاروں کے خلاف کارروائی میں قطعی کوئی دیر نہ کی جائے،کسی بھی قسم کی ہنگامی صورتحال میں شہریوں پر تشدد یا فائرنگ کسی صورت قابل قبول نہیں، ایسے فعل کے ذمہ داروں کے خلاف بلا تاخیر کاروائی کی جائے اور پبلک ہینڈلنگ کے لیے وضع کردہ ایس او پیز پر عمل در آمدہر صورت یقینی بنایا جائے ۔

یہ ہدایات انہوں نے سنٹرل پولیس آفس میں صوبے کے تمام آرپی اوز اور ڈی پی اوز کو ویڈیو لنک کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے جاری کیں ۔ کانفرنس ایڈیشنل آئی جی آپریشنز عامر ذوالفقار خان، اے آئی جی آپریشنزمحمد کاشف اور پی ایس ٹو آئی جی سجاد حسن منج سمیت دیگر اعلی افسران بھی موجود تھے۔آئی جی پنجاب نے آر پی اوز اور ڈی پی اوز کو ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ احتجاج، ہنگاموں یا کسی بھی ایمر جنسی صورتحال سے نبرد آزما ہونے کیلئے اینٹی رائٹس فورس کی تربیت اور استعداد کار کو بڑھانے کیلئے بھرپور اقدامات کئے جائیں اور اس بات کو یقینی بنایاجائے کہ تمام اضلاع میں اینٹی رائٹس فورس کے دستے میگا فونز ، واٹر کینن سمیت دیگر ضروری ساز سامان کے ساتھ لیس اوربھرپور ایکشن کیلئے ہمہ وقت تیار ہو۔

انہوں نے تاکید کی کہ پر تشدد ہنگاموں کی صورت میں بھی شہریوں پر فائرنگ کی اجازت نہ دی جائے ،ایسے حالات میں ڈی پی اوز فورس کی کمانڈخود کریں اور جوانوں کو ڈیوٹی پر بھجوانے سے قبل صورتحال کی نزاکت اور ڈیوٹی کی اہمیت کے حوالے سے بھرپور بریفنگ دیں تاکہ وہ اپنے فرائض بطریق احسن اور عمدگی سے ادا کرسکیں ۔اجلاس میں صوبے کے تمام اضلاع میں بچوں اور خواتین پرتشدد اور زیادتی کے واقعات اور انکی روک تھام کیلئے ہونے والے اقدامات کا جائزہ بھی لیا گیا ۔

آئی جی پنجاب نے تمام افسران کو ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ بچوں اور خواتین کے ساتھ زیادتی کے واقعات کی روک تھام کیلئے تمام ڈی پی اوز اپنی نگرانی میںمئوثر حکمت عملی وضع کریںجس کی ہفتہ وار رپورٹ باقاعدگی سے سنٹرل پولیس آفس بھی بھجوائی جائے ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/01/2018 - 23:02:57

اس خبر پر آپ کی رائے‎

Police, in the accident of abducted women, do not bear any delay in police accident. Captain (R) Arif Nawaz Anti-violence force training, talent should be done in the case of sexual abuse cases on children against the officers and officials using delayed resentment. 'Trouble, riots or any amer' Take steps to increase the 'IG Punjab's RPO, Addressing DPO Conference

Inspector General Police, Punjab Captain Arif Nawaz Khan has said that in the accident of abducted children and women, there is no delay in the police proceedings, the immediate arrest of the accused who committed perpetrators should be ensured on priority basis and sex on children Violence is not taken late in the case against the officers and officials used in the case of violence, violence or firing on civilians is not acceptable in any kind of emergency, against those responsible for such acts. Immediately delayed and made for public handling Assessment of ISOPs should be made in the meantime

Related : Police, Punjab, Car

متعلقہ عنوان :