وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان نے گلگت میں اپنی نوعیت کے پہلے کینسر ہسپتال کا سنگ بنیاد ..
تازہ ترین : 1

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان نے گلگت میں اپنی نوعیت کے پہلے کینسر ہسپتال کا سنگ بنیاد رکھ دیا

اس ہسپتال پر کل لاگت 2343 ملین روپے آئے گی اور 3سال کی مدت میں مکمل ہو گا، ڈاکٹر جاوید کی بریفنگ

وزیر اعلیٰ  گلگت بلتستان نے گلگت میں اپنی نوعیت کے پہلے کینسر ہسپتال ..
گلگت(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جنوری2018ء) وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے گلگت میں اپنی نوعیت کا پہلا کینسر ہسپتال گلگت انسٹیوٹ آف نیوکلیئر میڈیسن اونکالوجی اینڈ ریڈیوتھیراپی کا سنگ بنیاد رکھ دیا گیا اس سلسلے میں ایک اہم تقریب گلگت مناور میں منعقد ہوئی جہاں پر پاکستان اٹامک انرجی کمیشن کے ممبر و ماہرین،،وزیر اعلیٰ،،فورس کمانڈر،چیف سیکرٹری سکریٹری گلگت بلتستان اور مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے شرکت کی ۔

اس منصوبے کے پروجیکٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر جاوید نے منصوبے کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان اٹامک انرجی کمیشن کے تعاون سے بننے والا اس ہسپتال پر کل لاگت 2343 ملین روپے آئے گی اور تین سال کی مدت میں مکمل ہو گا۔انہوں نے کہا کہ پوری دنیا میں2012 کے ایک سروے کے مطابق کینسر کے مریضوں کی کل تعداد ایک کروڈ اکتالیس لاکھ تھی جبکہ اس وقت پاکستان میں ایک لاکھ پچاس ہزار ہیں اور 2017 میں گلگت بلتستان میں کینسر کے مریضوں کی کل تعداد 1538 تھی،57 فیصد کینسر کے مریض ترقی پذیر ممالک سے تعلق رکھتے ہیں۔

پاکستان میں سب سے زیادہ کینسر کے مریض منہ اور ہونٹ کے کینسر میں مبتلا ہیں،اس کے بعد چھاتی کے کینسر کے مریضوں کا نمبر آتا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ کینسر ایک قابل علاج مرض ہے،اس سے بچنے کے لئے احتیاطی تدابیر نہایت ضروری ہیں۔ اس موقع پہ پاکستان اٹامک انرجی کمیشن کے ممبر ضیاالدین نے اپنے خطاب میں کہا کہ(پی اے ای سی )ملک کے دفاع کے ساتھ ایٹمی تونائی کے پر امن استعمال پر یقین رکھتی ہے اور پی اے ای سی نے ملکی ترقی کے سفر میں اہم کردار ادا کر دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان میں پی اے ای سی کے اٹھارہ کینسر کے ہسپتال کام کر رہے ہیں اور ڈھائی ہزار سے زائد ڈاکٹر و ماہرین خدمات سر انجام دے رہے ہیں اور جلد ہی مزید ہسپتال اس نیٹ ورک میں شامل ہونگے۔انہوں نے کہا کہ میں وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان اور اس کی ٹیم کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ جن کی کوششوں اور تعاون سے ہم اس اہم منصوبے پر کام شروع کرنے میں کامیاب ہوئے۔

اس موقع پر وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن جو کہ اس تقریب کے مہمان خصوصی بھی تھے نے اپنے خطاب میں کہا کہ میں گلگت بلتستان کے عوام کی طرف سے پی اے ای سی کا دل کی گہرائیوں سے شکریہ ادا کرتا ہوں جن کی بدولت گلگت بلتستان جیسے پسماندہ علاقے میں ایک بڑے اور اہم منصوبے کا سنگ بنیاد رکھ دیا گیا جس کی تکمیل پر گلگت بلتستان میں کینسر کے مریضوں کو بروقت اور سستا علاج و معالجہ میسر ہوگی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اٹامک انرجی کمیشن پر ہم سب کو فخر ہے۔جس کی بدولت ہمارے ملک کا دفاع ناقابل تسخیر ہو چکا ہے اور دفاع کے علاوہ تونائی اور صحت کے شعبے میں بھی اہم کردار ادا کر رہا ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/01/2018 - 22:37:18

اس خبر پر آپ کی رائے‎

متعلقہ عنوان :