پولیس نے کمسن بچی سے زیادتی کےملزم پکڑنے کیلئے والدین سے رشوت مانگ لی،عدم گرفتاری ..
تازہ ترین : 1

پولیس نے کمسن بچی سے زیادتی کےملزم پکڑنے کیلئے والدین سے رشوت مانگ لی،عدم گرفتاری پر والد کی خودسوزی کی دھمکی

پولیس نے کمسن بچی سے زیادتی کےملزم پکڑنے کیلئے والدین سے رشوت مانگ ..
خانیوال (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار - 12جنوری 2018ء ): خانیوال میں پولیس نے 8سالہ کمسن بچی سے زیادتی کےملزم پکڑنے کیلئے والدین سے رشوت مانگ لی،عدم گرفتاری پر والد کی خودسوزی کی دھمکی دے دی۔تفصیلات کے مطابق غریب رکشہ ڈرائیور شاہد جلیل کی تیسری کلاس میں پڑھنے والی 8 سالہ بیٹی علیزہ مریم اپنے ساتھ ہونے والے ظلم پر انصاف کی منتظر ہے۔کچھ عرصہ قبل کمسن مریم اپنے گھر کی گلی میں دکان پر گئی تو وہاں پر محمد خان نامی ملزم نے اسے اغوا کرنے کے بعد ہوس کا نشانہ بنا ڈالا۔

میڈیکل کے بعد پولیس نے مقدمہ تو درج کر لیالیکن 12 روز گزرنے کے باوجود ملزم تاحال گرفتار نہیں کیا جسکا۔ دوسری جانب پولیس تھانہ سٹی نے غریب رکشہ ڈرائیور شاہد جلیل سے رشوت طلب کر لی کہ ہمیں پیسے دو پھر ہم ملزم کو گرفتار کریں گے۔ ڈی ایس پی صدر نے بھی غریب رکشہ ڈرائیور کو اپنے دفتر میں بلا کر کہا کہ تم کسی صحافی کے پاس مت جانا اور نہ ہی پولیس کی کسی کو شکایت کرنا‘ غریب رکشہ ڈرائیور شاہد جلیل نے انصاف نہ ملنے پر وزیراعظم ہائوس جاکرخودسوزی کا اعلان کر دیا۔
وقت اشاعت : 12/01/2018 - 20:50:52

اس خبر پر آپ کی رائے‎

Police threatens father's self-determination against arrest of abducted minority girl

Police in Khanwal demanded 8-year-old Kamin bribery to arrest the abducted child, threatened father's self-determination on non-arrest. According to details, 8-year-old daughter, 8-year-old daughter of poor Rakhsha driver, Shahid Jalil, was studying in her class. Looking forward to justice on the wrongdoing. Some time before, Mrs. Mary went to the shop at the street of her house, but the name of Muhammad Khan, after being kidnapped, was hugged after her abduction.