خیبرپختونخواہ میں بھی حوا کی بیٹی درندوں کے ہاتھ لگ گئی، ماں فریاد لے کر سامنے ..
تازہ ترین : 1

خیبرپختونخواہ میں بھی حوا کی بیٹی درندوں کے ہاتھ لگ گئی، ماں فریاد لے کر سامنے آگئی

خیبرپختونخواہ میں بھی حوا کی بیٹی درندوں کے ہاتھ لگ گئی، ماں فریاد ..
ہری پور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جنوری2018ء) میری بیٹی کو گروہ نے فروخت کر دیا ہے بیٹی کو بازیاب کرکے کاروائی عمل میں لائی جائے بیوہ خاتون کی فریاد زرائع کے مطابق جب درہ کی رہائشی بیوہ خاتون غزالہ ناہید بیوہ فخر زمان نے احاطہ عدالت میں صحافیوں سے گفتگو کے دوران الزام عائد کیا ہے کہ اس کی جواں سالہ بیٹی آمنہ بی بی دختر زمان کو نوجوان ورغلاء کرلے گے ہیں جن کے خلاف 5/1/18کو پولیس اسٹیشن میں علت نمبر 8ایف آئی آر 365Bکے تحت در ج کروائی گئی ہے مگر اب تک نہ ملزم گرفتار ہو سکیں ہیں اور نہ میری جواں سالہ بیٹی بازیاب ہو سکی ہے بیوہ خاتون نے الزام عائد کیا ہے کہ ایک مخصوص گروہ نے میری بیٹی کو اغواء کے بعد پہلے ٹیکسلا میں فروخت کرنے کی کوشش کی میری وہاں پہنچنے پر وہاں سے کوٹ نجیب اللہ کے بھٹہ خشت پر میری بیٹی کو فروخت کر دیا گیا ہے جن کے خلاف ایف آئی آر در ج کروائی ہے ان کا بھٹہ خشت کے مزدوروں سے رقم کا لین دین بھی رہتا ہے خدشہ ہے ان پر میری بیٹی کی قیمت لے کر فروخت کر دیا گیا ہے خاتون نے الزام عائد کیاہے ضلع بھرمیں ایک مخصوص مافیا سرگرم ہے جن کے رکارندے لڑکیوں کو ورغلا کر بھگا لے جاتے ہیں بعدازاں کو دوسرے شہروں میں فروخت کر دیا جاتا ہے تاہم میں اپنی بیٹی کے لیے فکر مند ہوں پولیس اسٹیشن کے دھکے کھاتے پھر رہی ہوں مگر کوئی شنوائی نہیں ہو رہی ہے عدالتوں سے انصاف کی توقع ہے میری بیٹی کو بھی بازیاب کراکے میرے حوالہ کیاجائے اس ضمن میں رابطہ کرنے پر پولیس اسٹیشن خان پور میں ڈیوٹی پر موجود تفتیشی افسرنے بتایا ہے کہ خاتون کی جانب سے مقدمہ کا اندراج کر دیا گیا ہے بیوہ خاتون کی جانب سے جب درہ کے علاقہ کے تین افراد کو نامزد کیا گیا ہے تینوں افراد بیوہ خاتون کے قریبی رشتہ دار بھی ہیں جن کی گرفتاری کے لیے کوشش جاری ہے جلد گرفتار کر لیا جائے گا
اس خبر نوں پنجابی وچ پڑھو
وقت اشاعت : 12/01/2018 - 18:45:18
Eve's daughter in Khyber Pakhtunkhwa got the hands of the birds, mother came out with frenzy

My daughter has sold a group by raising the daughter and being brought into action according to the fate of Zulfikar Ali Bhutto, when a resident of the Doha resident Ghazi Nehide widow, Fakhar Zaman, has accused the journalists during interrogation court. His daughter-in-law, daughter-in-law, Amman Bibi, will be young youth, against whom the police station has been deported under the No. 8FIR 365B against 5/1/18, but no suspects are arrested yet. My daughter, daughter-in-law, can be recovered, the widow has accused that a certain group of my daughter was kidnapped after the kidnapping. When I reached there, my daughter has been sold to Kot Bhagya from Kot Najibullah, who has been kidnapped against FIR, whose loss from money to workers of labor has also been paid. There is a fear that they have been sold for the price of my daughter. The woman has alleged that there is a special mafia in the district whose interrogators take away the wings and are sold in other cities. However, I am worried about my daughter, I am getting banged by police station but there is no audition. My daughter is also recovering from me, referring to me, referring to this matter, in connection with this connection, the police officer, in the Khanpur district, told the investigator that the case has been registered by the woman. Three people have been nominated, three are also close relatives of widow women who are trying to arrest, soon be arrested