یونیورسٹی آف سندھ کے کنٹریکٹ پر کام کرنے والے اساتذہ کی مستقلی کا عمل شروع کر ..
تازہ ترین : 1

یونیورسٹی آف سندھ کے کنٹریکٹ پر کام کرنے والے اساتذہ کی مستقلی کا عمل شروع کر دیا ہے ،نثار کھوڑو

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جنوری2018ء) حکومت سندھ نے یونیورسٹی آف سندھ کے کنٹریکٹ پر کام کرنے والے اساتذہ کی مستقلی کا عمل شروع کر دیا ہے ۔ یہ بات سندھ کے سینئر وزیر برائے خوراک و پارلیمانی امور نثار احمد کھوڑو نے جمعہ کو سندھ اسمبلی میں پاکستان مسلم لیگ (فنکشنل ) کی خاتون رکن نصرت سحر عباسی کی تحریک التواء پر بتائی ۔ نصرت سحر عباسی نے اپنی تحریک التواء میں کہا کہ سندھ یونیورسٹی کے کنٹریکٹ ٹیچرز کا معاملہ 2013 ء سے زیر التواء ہے ۔

انہیں 2012 ء میں منظور کردہ آرڈی ننس کی بنیاد پر مستقل کیا جانا تھا ۔ صرف کراچی ڈویژن کے اساتذہ کو مستقل کیا گیا ہے جبکہ سندھ کے باقی اضلاع کے اساتذہ کا مسئلہ ابھی حل نہیں ہوا ۔ نثار احمد کھوڑو نے اس تحریک التواء کی مخالفت کی اور کہاکہ اساتذہ کو مستقبل کرنے کا عمل جاری ہے ۔ لہذا یہ تحریک التواء خلاف ضابطہ ہے ۔ ڈپٹی اسپیکر شہلا رضا نے اس پر تحریک التواء کو نمٹا دیا ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/01/2018 - 16:43:20

اس خبر پر آپ کی رائے‎

Nisar Khar has begun the directive of teachers working on contract of University of Sindh.

The Sindh government has started the process of directing the teachers working on the contract of the University of Sindh. Sindh Chief Minister for Food and Parliamentary Affairs Nisar Khadro told on Tuesday the movement of Naseer Sahar Abbasi, female member of Pakistan Muslim League-Nawaz in Sindh Assembly. Nusrat Saha Abbasi said in his move that the matter of contractual university teachers of Sindh University is pending in 2013.

Related : Sindh

متعلقہ عنوان :