زینب ایک ماہ سے خاموش خاموش رہنے لگی تھی،والدہ کا بیان
تازہ ترین : 1

زینب ایک ماہ سے خاموش خاموش رہنے لگی تھی،والدہ کا بیان

زینب ایک ماہ سے خاموش خاموش رہنے لگی تھی،والدہ کا بیان
(اردو پوائنٹ تازہ اخبار 12۔ جنوری 2018) قصور میں زیادتی کا شکار ہونے والی ننھی زینب کی والدہ نے نجی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میری بچی فرشتہ تھی۔وہ ایک ماہ سے خاموش خاموش سی رہنے لگی تھی۔زینب میرے بغیر بلکل نہیں رہ سکتی تھی۔میں نے اس کو آخری بار ائیر پورٹ پر دیکھا تھا ۔ مجھے مدینہ میں زینب کے اغوا ہونے کی خبر ملی تھی۔زینب کی والدہ نے مزید کہا کہ اللہ کرے زینب کے ساتھ زیادتی کرنے والا فرعون درندہ زمین میں دھنس جائے۔واضح رہے کہ سات سالہ زینب گھر سے سپارہ پڑھنے نکلی تھی تو اس کو اغوا کر لیا گیا تھا ۔بعد ازاں زیادتی کا نشانہ بنا کر مار دیا گیا ۔اور لاش کوڑاکرکٹ میں پھینک دی گئی۔زینب کے ساتھ پیش آنے والے اس درندگی کے واقعے کے بعد پوارا ملک سراپا احتجاج ہے۔
وقت اشاعت : 12/01/2018 - 16:02:12

اس خبر پر آپ کی رائے‎

Zainab was silent silent for a month, mother's statement

The young Zainabab girl, who was abused in Kasur, spoke to the private channel, saying, "My child was an angel. She was silent silent for a month." I was not able to live without myself. The bar was seen at the airport. I got news about Zainab's kidnapping in Madina