تھر میں حالیہ سردی کے باعث 18 بچے لقمہ اجل بن گئے
تازہ ترین : 1

تھر میں حالیہ سردی کے باعث 18 بچے لقمہ اجل بن گئے

غذائیت کی کمی کے شکار بچے قوت مدافعت کی کمی کے سبب سردی کی شدت اور موسمی امراض سے زیادہ متاثر ہو رہے ہیں،ڈاکٹرز

تھر میں حالیہ سردی کے باعث 18 بچے لقمہ اجل بن گئے
مٹھی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جنوری2018ء)سندھ کے صحرائی علاقے تھر میں حالیہ سرد موسم کے باعث بچوں کی اموات میں غیر معمولی اضافہ ہوگیا ہے۔محکمہ صحت کے مطابق جنوری کے ابتدائی 10 دنوں میں سول اسپتال مٹھی میں 18 بچے جاں بحق ہوئے۔اس سے قبل تھر کے سرکاری اسپتالوں میں ماہ نومبر میں 47 بچے جاں بحق ہوئے اور دسمبر میں یہ تعداد 44 ہوگئی تھی۔تھرکے صحرا میں غذائیت کی کمی اور دیگر امراض کے باعث بچوں کی اموات کا سلسلہ تو اب افسوسناک معمول بن چکا ہے تاہم حالیہ سرد موسم بھی معصوم بچوں کی جان کا دشمن بن گیا۔

ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ غذائیت کی کمی کے شکار بچے قوت مدافعت کی کمی کے سبب سردی کی شدت اور موسمی امراض سے زیادہ متاثر ہو رہے ہیں جس کے نتیجے میں بچوں کی اموات میں بھی اضافہ ہوگیا ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/01/2018 - 14:41:29

اس خبر پر آپ کی رائے‎

In recent months due to recent cold, 18 children became a symbol Children suffering from lack of nutrition are affected by cold intensity and weather conditions due to lack of immunity, doctors

According to Health Health, 18 children died in Civil Hospital Fist in the first 10 days of January, according to Health Health. Monthly in hospitals of Thar In November, 47 children were killed and 44 in December

Related : Thar

متعلقہ عنوان :