میری بچی 8 سال کی نہیں ساڑھے چھ سال کی تھی۔ والدہ زینب
تازہ ترین : 1

میری بچی 8 سال کی نہیں ساڑھے چھ سال کی تھی۔ والدہ زینب

میں اس سے وعدہ کر کے گئی تھی کہ اس بار مجھے عمرے پر جانے دو اگلی مرتبہ تمہیں لے جاؤں گی۔ والدہ زینب کی نجی ٹی وی چینل سے گفتگو

میری بچی 8 سال کی نہیں ساڑھے چھ سال کی تھی۔ والدہ زینب
قصور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 12 جنوری 2018ء): قصور میں کم سن بچی کے ساتھ درندگی کا واقعہ پیش آیا ۔ تفصیلات کے مطابق اس واقعہ کے خلاف قصور سمیت ملک بھر کی عوام سراپا احتجاج ہے۔ زینب کی والدہ نے نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئےکہا کہ میری بیٹی 8 سال کی نہیں بلکہ ساڑھے چھ سال کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ میں جب عمرے پر جانے لگی تو میں اس سے وعدہ کر رکے گئی تھی کہ اگلی مرتبہ تمہیں بھی اپنے ساتھ لے کر جاﺅں گی۔

میں اللہ کے گھر میں دعا کرتی رہی کہ اللہ مجھے صبر عنایت فرما لیکن مجھے یہ معلوم نہیں تھا کہ مجھے اپنی بچی کی موت پر صبر کرنا ہو گا۔ زینب کی والدہ نے میڈیا سے کہا کہ وعدہ کرتے ہو؟ کہ اس بار ہمیں اکیلا نہیں چھوڑو گے۔ قصور بارہ لاشیں اُٹھا چکا ہے اور یہ وہ لاشیں ہیں جو رپورٹ ہوئی ہیں۔ میری بچی کو گھر سے پانچ سو گز کے فاصلے سے اغوا کیا گیا اور پھر چند گھنٹوں کے بعد وہیں پھینک دیا گیا جہاں قصور بھر کا کچرا پھینکا جاتا ہے۔ زینب کی والدہ نے مزید کیا بات کی آپ بھی ملاحظہ کیجئیے:

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/01/2018 - 11:10:00
My child was not 8 years old or eight years old. Mother zenib I was promised that this time I go to the age of age you will take the next time. Talk to Mother Zain's private TV channel

Kasuri witnessed an incident with a low sleeping baby. According to details, the people around the country, including Kasoor, are protesting against this incident. Zainab's mother talked to a private TV channel saying that my daughter was not eight years old but she was six and a half years old. He said, "When I went to my age, I was promised to bring you with me next time."

Related : Private TV Channel

متعلقہ عنوان :