اسلام آباد ہائیکورٹ نے سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کے خلاف دائر درخواست پر تفصیلی ..
تازہ ترین : 1

اسلام آباد ہائیکورٹ نے سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کے خلاف دائر درخواست پر تفصیلی رپورٹ طلب کرتے ہوئے سماعت 22 دسمبر تک ملتوی کردی

اسلام آباد ہائیکورٹ نے سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کے خلاف دائر درخواست ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 دسمبر2017ء) اسلام آباد ہائیکورٹ نے سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کی تشہیر کے خلاف دائر درخواست پر تفصیلی رپورٹ طلب کرتے ہوئے سماعت 22 دسمبر تک ملتوی کردی۔ جمعہ کو جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے سوشل میڈیا اور انٹرنیٹ پر گستاخانہ مواد کی تشہیر کے خلاف کیس کی سماعت کی۔ سیکرٹری داخلہ،ایف آئی آے،پی ٹی اے کے نمائندے اور ڈپٹی اٹارنی جنرل عدالت کے ربرو پیش ہوئے۔

سیکرٹری داخلہ نے عدالت کو بتایا کہ وزیراعظم نے تحفظ ناموس رسالت فیصلے پر عملدرآمد کمیٹی بنائی ہے،کمیٹی میں قانون،آئی ٹی،وزارت اطلاعات اور داخلہ کے نمائندے شامل ہیں۔ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے ریمارکس دیئے کہ ساڑھے آٹھ ماہ میں حکومت نے کچھ نہیں کیا۔ ڈپٹی اٹارنی جنرل نے کہا کہ عدالت کو یقین دلاتا ہوں حکومت فیصلے پر عمل درآمد کرائے گی۔ سیکرٹری داخلہ نے عدالت سے استدعا کی کہ تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کیلئے دو ہفتے کا وقت دیا جائے۔ عدالت نے کیس کی سماعت 22 دسمبر تک ملتوی کردی۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 15/12/2017 - 16:48:28

اس خبر پر آپ کی رائے‎

Islamabad High Court demanding a detailed report on filed against anti-terrorism material on social media while adjourning till December 22

Islamabad High Court demanding a detailed report on filed against advertisement on allegations of fraudulent material while hearing the hearing till December 22. On Friday, Justice Shaukat Aziz Siddiqui heard the case against social media and the promotion of pertinent material on the internet. Secretary of Interior, FI, PTA representative and Deputy Attorney General

Related : Hearing, Social Media

متعلقہ عنوان :