اسلام آباد ہائی کورٹ نے میر علی میں 2009ء میں ڈرون حملے پر ایف آئی آر کے اندراج ..
تازہ ترین : 1

اسلام آباد ہائی کورٹ نے میر علی میں 2009ء میں ڈرون حملے پر ایف آئی آر کے اندراج پر عمل درآمد کیس میں آئی جی اسلام آباد اور ایس ایچ او نواز بھٹی کو ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا

اسلام آباد ہائی کورٹ نے میر علی میں 2009ء میں ڈرون حملے پر ایف آئی آر ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 دسمبر2017ء) اسلام آباد ہائی کورٹ نے میر علی میں 2009ء میں ڈرون حملے پر ایف آئی آر کے اندراج پر عمل درآمد کیس میں آئی جی اسلام آباد اور ایس ایچ او نواز بھٹی کو ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا ۔جمعہ کو عدالت عالیہ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے میر علی میں 2009ء میں ڈرون حملے پر ایف آئی آر کے اندراج پر عمل درآمد کیس کی سماعت کی ۔

اس موقع پر وفاق کی جانب سے ایڈووکیٹ جنرل میاں عبدالرؤف عدالت میں پیش ہوئے جبکہ درخواست گزار کریم خان کے وکیل مرزا شہزاد اکبر عدالت میں پیش ہوئے۔ سماعت کے دوران فاضل جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے ریمارکس دیے کہ یہ توہین عدالت ہے کہ عدالتی حکم کے باوجود آپ نے معاملہ کہیں اور بھیج دیا ۔عدالت نے آئندہ سماعت پر آئی جی اسلام آباد اور ایس ایچ او نواز بھٹی کو ذاتی حیثیت میں طلب کر تے ہوئے کیس کی سماعت 15 جنوری تک ملتوی کر دی.

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 15/12/2017 - 16:48:27

اس خبر پر آپ کی رائے‎

Islamabad High Court in Mir Ali in 2009, in the case of FIR implementation of the FIR in 2009, IG Islamabad and SHO Nawaz Bhatti sought personal status.

The Islamabad High Court in the case of Mir Ali in 2009, in the implementation of the FIR registration process, IG Islamabad and SHO Nawaz Bhatti were in personal custody .Jajaa, Justice Justice Shukat Aziz Siddiqui, In Mir Ali, in 2009, the case was filed against the implementation of FRE registration on drone attacks

Related : Drone

متعلقہ عنوان :