سپریم کورٹ:جہانگیرترین صادق اورامین نہیں،62 ون ایف کے تحت تاحیات نااہل قرار
تازہ ترین : 1

سپریم کورٹ:جہانگیرترین صادق اورامین نہیں،62 ون ایف کے تحت تاحیات نااہل قرار

سپریم کورٹ:جہانگیرترین صادق اورامین نہیں،62 ون ایف کے تحت تاحیات نااہل ..
اسلام آباد(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 14دسمبر2017ء ):سپریم کورٹ نے تحریک انصاف کے رہنماء جہانگیر ترین کونا اہل قراردے دیا ہے،سپریم کورٹ نے جہانگیرترین کو 62ون ایف کے تحت تاحیات نااہل قرار دیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے عمران خان اور جہانگیرترین کیخلاف نااہلی کیس کی سماعت کی۔

عمران خان اور جہانگیرترین کیخلاف سپریم کورٹ میں نااہلی کی درخواست مسلم لیگ ن کے رہنماء حنیف عباسی نے دائر کی ۔سپریم کورٹ میں چیف جسٹس کی سربراہی میں 405دن کیس کی سماعت ہوئی۔آج سپریم کورٹ نے عمران خان اور جہانگیرترین کی نااہلی کیس کافیصلہ سنا دیا ہے۔سپریم کورٹ نے اپنے فیصلے میں عمران خان کو اہل قرار دے دیا ہے۔عدالت نے اپنے فیصلے میں قرار دیا کہ جہانگیرترین کو اہل قرار نہیں دیا جاسکتا۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں یہ بھی قرار دیا کہ جہانگیرترین درست جواب نہیں دے رہے تھے لہذا جہانگیرترین صادق اور امین نہیں رہے۔ جہانگیرترین ایماندار شخص نہیں ہیں۔ جہانگیرترین نے اپنے بیان میں مشکوک ٹرمز استعمال کیں۔جہانگیرترین نے اعتراف جرم بھی کیا اور جرمانہ بھی دیا۔ واضح ہوگیا کہ جہانگیرترین کی ہی آف شورکمپنیاں ہیں۔ہائیڈ ہاؤس کا اصل مالک جہانگیرترین ہے۔جہانگیرترین نے 50کروڑ روپے بیرون ملک منتقل کیے۔سپریم کورٹ نے کہاکہ جہانگیرترین کی زرعی اراضی کیس کا فیصلہ ابھی فی الحال نہیں سنایاجارہاہے۔
وقت اشاعت : 15/12/2017 - 15:44:34
The Supreme Court declared Jihangirtharan the leader of Tehreek-e-Insaf's Quadruplements

The Supreme Court has declared Jihadirthrin Kunna's leader as the leader of the Tehreek-e-Insaf (PTI), the Supreme Court has disqualified Jahangirrrrir under 62 WP. According to media reports, three member bench headed by Supreme Court Chief Justice Saqib Nisar heard the disqualified case against Imran Khan and Jihangirrin.