فیض آباد دھرنے کی میڈیا پر نشریات روکنے کے خلاف درخواست پر وفاقی حکومت اور چیئرمین ..
تازہ ترین : 1
فیض آباد دھرنے کی میڈیا پر نشریات روکنے کے خلاف درخواست پر وفاقی حکومت ..

فیض آباد دھرنے کی میڈیا پر نشریات روکنے کے خلاف درخواست پر وفاقی حکومت اور چیئرمین پیمرا کو نوٹس

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 دسمبر2017ء)لاہور ہائیکورٹ کی جسٹس عائشہ اے ملک نے فیض آباد دھرنے کی میڈیا پر نشریات روکنے اور سوشل میڈیا پر پابندی کے خلاف درخواست پر وفاقی حکومت اور چیئرمین پیمرا کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔درخواست گزارکے وکیل اظہر صدیق ایڈووکیٹ نے عدالت کو بتایا کہ فیض آباد دھرنے کی لائیو کوریج کرنے پرپیمراء نے کسی قانونی جواز کے بغیر چینلز کی نشریات بند کر دیں، انہوں نے کہا کہ آئین کے آرٹیکل 19 اے کے تحت اطلاعات تک رسائی ہر شہری کا آئینی اور بنیادی حق ہے، چینلز اور سوشل میڈیا کی بندش سے ملک میں افواہ سازی شروع ہوئی جس کے نتیجے میں نہ صرف شہری خوف و ہراس میں مبتلا ہوئے بلکہ ملکی معاشی سرگرمیوں کو بھی شدید نقصان پہنچا، انہوں نے استدعا کی کہ غیر قانونی پر چینلز کی نشریات بند کرنے اور سوشل میڈیا پر عدالت چیئرمین پیمراء سے وضاحت طلب کرے ،جس پر عدالت نے چیئرمین پیمراء کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 07/12/2017 - 17:34:55

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں