مقبوضہ کشمیر: ڈیموکریٹک فریڈم پارٹی کی سرینگر میں احتجاجی ریلی
تازہ ترین : 1

مقبوضہ کشمیر: ڈیموکریٹک فریڈم پارٹی کی سرینگر میں احتجاجی ریلی

بھارتی پولیس نے عبداللہ طاری اوردرجنوں کارکنوں کو گرفتار کر لیا

سری نگر ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 نومبر2017ء) مقبوضہ کشمیر میں جموںوکشمیر ڈیموکریٹک فریڈم پارٹی نے تنظیم کے غیر قانونی طور پر نظر بند علیل چیئرمین شبیر احمد شاہ کے ساتھ نئی دلی کی بدنام زمانہ تہاڑ جیل انتظامیہ کے غیر انسانی سلوک کے خلاف سرینگر میں ایک احتجاجی ریلی نکالی۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق فریڈم پارٹی کے رہنما ایڈووکیٹ فیاض احمد سودا گرکی قیادت میں مظاہرین نے قابض انتظامیہ کی پابندیوں کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے پریس انکلیو سرینگر سے ریلی نکالی۔

انہو ں نے بینرز اور پلے کارڑز اٹھا رکھے تھے جن پر شبیر احمد شاہ کو مناسب طبی امداد فراہم کرنے کے حوالے سے نعرے درج تھے۔ ریلی کے شرکا ء کا کہنا تھا کہ شبیر احمد شاہ کو حق خود ارادیت کے حصول کی جدوجہد سے روکنے کیلئے بارہ برس پرانے ایک جھوٹے مقدمے میں گرفتار کیا گیا۔ پولیس نے مارچ کے شرکا پر دھاوا بول کر درجنوںکارکنو ں کو گرفتار کر لیا۔ قبل ازیں بھارتی پولیس نی سرینگر میں ڈیموکریٹک فریڈم پارٹی کے دفتر پر چھاپہ مار کر تنظیم کے جنرل سیکرٹری محمد عبداللہ طاری کو گرفتار کیا اوردفتر کو سیل کر دیا۔ تمام گرفتار افراد کو کوٹھی باغ تھانے میں نظر بند کیا گیا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 23/11/2017 - 22:30:35

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں