فیض آباد میں دھرنا دینے والے دھرنا قائدین اب تک 4 کروڑ 75 لاکھ 20 ہزار روپے سے زائد ..
تازہ ترین : 1
فیض آباد میں دھرنا دینے والے دھرنا قائدین اب تک 4 کروڑ 75 لاکھ 20 ہزار ..

فیض آباد میں دھرنا دینے والے دھرنا قائدین اب تک 4 کروڑ 75 لاکھ 20 ہزار روپے سے زائد کے اخراجات کرچکے

دھرنے والوں کا روزانہ صرف کھانے کا خرچہ 26 لاکھ 40 ہزار ہے، دھرنے میں شریک کسی بھی شخص کی ماہانہ آمدن 30 ہزار روپے سے زائد نہیں، اتنا سرمایہ کہاں سے آ رہا ہے؟ اسلام آباد پولیس کی رپورٹ نے سوالات جنم دے دیے

اسلام آباد (اردوپوائنٹ تازہ ترین اخبار۔23 نومبر2017ء) اسلام آباد میں مذہبی جماعتوں کے دھرنے کیلئے فراہم کیے جانے والے سرمائے سے متعلق سوالات اٹھنے لگے ہیں۔ وفاقی دارلحکومت اسلام آباد کی پولیس کی جانب سے فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق فیض آباد میں دھرنا دینے والے دھرنا قائدین اب تک 4 کروڑ 75 لاکھ 20 ہزار روپے سے زائد کے اخراجات کرچکے ہیں۔

دھرنے والوں کا روزانہ صرف کھانے کا خرچہ 26 لاکھ 40 ہزار ہے۔ دھرنا قائدین اپنے 22سو افراد کیلیے روز تین وقت کا کھانا دےرہے ہیں۔ دھرنا میں شریک افراد پر روزانہ 12سوروپے فی کس کا خرچ آرہا ہے جبکہ گاڑیوں کاکرایہ ، پیٹرول و ڈیزل کا خرچہ اس رقم کے علاوہ ہے۔ پولیس کی رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ دھرنے میں شریک کسی بھی شخص کی ماہانہ آمدن 30 ہزار روپے سے زائد نہیں ہے۔ ایسے میں سوالات اٹھنے لگے ہیں دھرنے کیلئے اتنا سرمایہ کہاں سے آ رہا ہے؟ واضح رہے کہ اس دھرنے کے حوالے سے کئی وفاقی وزراء بھی یہ دعوی کر چکے ہیں کہ اس تمام معاملے کا مقصد مذہبی نہیں بلکہ سیاسی ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

اس خبر نوں پنجابی وچ پڑھو
وقت اشاعت : 23/11/2017 - 19:31:00

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں