بھارت میں مذہبی تعصب پرراشن بندش سے مسلمان خاتون جاں بحق
تازہ ترین : 1

بھارت میں مذہبی تعصب پرراشن بندش سے مسلمان خاتون جاں بحق

کانپور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 نومبر2017ء)بھارتی ریاست اتر پردیش کی متعصب حکومت نے مسلمانوں کا راشن بھی بند کردیا ،بندش کیساتھ ہی رائے بریلی میں ایک مسلمان خاتون بھوک سے نڈھال ہوکر چل بسیں،خاندان کا کہناہے کہ سکینہ پانچ روز سے بھوکی تھی۔وزیراعلی یوگی ادیتہ کی حکومت نے پہلے تاج محل اور دیگر مسلم سیاحتی مقامات کو سیاحتی کتابچے میں سے نکالا اور پھر ٹیپو سلطان سمیت دیگر مسلم شہنشاہوں کیسالگرہ منانیپربھی اعتراض کیااب مسلمانوں کا رشن بھی بندکردیاگیاہے۔

اترپردیش حکومت نے آدھار راشن اسکیم کے تحت کم پیسوں میں غریبوں کو دیا جانا والا راشن مسلمانوں کو دینا بند کردیاہے۔بھوک کے باعث مرنے والی مسلم خاتون سکینہ کے خاندان نے کہاکہ دکاندار نے کارڈ دکھانے کے باوجود راشن نہیں دیا۔اور خاندان مسلسل فاقے کاٹنے پر مجبور تھا۔خاندان کو کہنا تھا کہ سکینہ بیمار تھی اور مسلسل بھوک کے باعث دم توڑ گئیں۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 17/11/2017 - 15:41:43

اس خبر پر آپ کی رائے‎

متعلقہ عنوان :