اسلام آباد ہائی کورٹ نے الیکشن ایکٹ 2017 معطل کردیا،
تازہ ترین : 1
اسلام آباد ہائی کورٹ نے الیکشن ایکٹ 2017 معطل کردیا،

اسلام آباد ہائی کورٹ نے الیکشن ایکٹ 2017 معطل کردیا،

فریقین کونوٹس جاری ختم نبوت سے متعلق تمام شقیں اور حلف ناموں کو اصل حالت میں بحال کیا جائے، درخواست گزار

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 نومبر2017ء) ہائی کورٹ نے الیکشن ایکٹ 2017 آئندہ سماعت تک معطل کردیا ہے۔ منگل کے روز اسلام آباد ہائیکورٹ کے جج جسٹس شوکت عزیز صدیقی کی سربراہی میں سنگل رکنی بنچ نے انتخابی اصلاحات بل کے ذریعے ختم نبوت سے متعلق شقوں میں ترمیم کے معاملے کی سماعت کی۔درخواست گزار کی جانب سے انتخابی اصلاحات بل کے ذریعے ختم نبوت سے متعلق شقوں میں ترمیم کے خلاف آئینی درخواست دائر کی گئی تھی جس میں موقف اپنایا گیا کہ ختم نبوت سے متعلق تمام شقوں اور حلف ناموں کو اصل حالت میں بحال کیا جائے، عدالت نے دلائل سننے کے بعد تمام فریقین کونوٹس جاری کرتے ہوئے الیکشن ایکٹ 2017 آئندہ سماعت تک معطل کرنے کا حکم دیا ہے۔

اس سے قبل تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان اور عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد سمیت دیگر سیاسی جماعتوں نے بھی الیکشن اصلاحات ایکٹ 2017 کو چیلنج کیا تھا۔واضح رہے کہ قومی اسمبلی نے انتخابی اصلاحات کے بل 2017 کی کثرت رائے سے منظوری دی تھی، بل میں اپوزیشن اور حکومت کی 40 سے زائد ترامیم شامل کی گئی، بل کی منظوری کے وقت تحریک انصاف کے ارکان نے اپنے مجوزہ نکات تسلیم نہ کیے جانے پر اجلاس سے واک آؤٹ کردیا تاہم اسمبلی میں بل کو کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا تھا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 14/11/2017 - 16:04:28

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں