سابق وزیر اعظم کل وطن واپس پہنچیں گے ،ْ پرسوں احتساب عدالت میں پیش ہونگے
تازہ ترین : 1
سابق وزیر اعظم کل وطن واپس پہنچیں گے ،ْ پرسوں احتساب عدالت میں پیش ہونگے

سابق وزیر اعظم کل وطن واپس پہنچیں گے ،ْ پرسوں احتساب عدالت میں پیش ہونگے

بیرونی طاقتوں نے مقامی سہولت کا استعمال کرتے ہوئے نواز شریف کو پاناما پیپرز کیس میں نااہل کروایا ،ْوفاقی وزیر مشاہد اللہ

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 اکتوبر2017ء)سابق وزیراعظم محمد نوازشریف کل بدھ کے روز وطن واپس پہنچیں گے اور پرسوں جمعرات کو احتساب عدالت میں پیش ہوں گے ۔میڈیا رپورٹ کے مطابق سابق وزیراعظم نوازشریف بدھ کے روز وطن واپس آئیں گے اور جمعرات کو احتساب عدالت میں پیش ہوں گے ،ْنوازشریف وطن واپسی پر پارٹی رہنمائوں اور قانونی ٹیم سے مشاورت بھی کریں گے ۔

واضح رہے کہ نوازشریف گزشتہ روز لندن سے سعودی عرب پہنچے تھے جہاں ان کا استقبال ،ْ(ن )لیگی رہنمائوں اور الخانہ نے کیا ،نوازشریف ایئرپورٹ سے اپنے بیٹے حسن نواز کی رہائش گاہ گئے تھے ۔عمرہ کی ادائیگی کے بعد اب وہ (آج)بدھ کے روز وطن واپسی کیلئے روانہ ہوں گے ۔دوسری جانب وفاقی وزیر مشاہد اللہ خان نے تصدیق کی کہ محمد نوازشریف 26 اکتوبر سے قبل واپس پاکستان آجائیں گے اور اسلام آباد کی احتساب عدالت میں پیش ہوں گے۔

مشاہد اللہ خان سے جب سوال کیا گیا کہ کیا سابق وزیر اعظم سعودی شاہی خاندان سے اپنی حمایت حاصل کرنے کیلئے جدہ روانہ ہوئے ہیں جس پر وزیر مملکت کا کہنا تھا کہ یقینا ریاض میں نواز شریف کے دوست موجود ہیں تاہم اس وقت ان کے دورہ سعودی عرب کا مقصد اپنی والدہ کے ساتھ عمرہ کی ادائیگی ہے جن کی وہ بے حد پرواہ کرتے ہیں۔وفاقی وزیر نے کہا کہ بیرونی طاقتوں نے مقامی سہولت کا استعمال کرتے ہوئے نواز شریف کو پاناما پیپرز کیس میں نااہل کروایا جبکہ نواز شریف کا پاناما پیپرز کیس میں نام شامل نہیں تھا۔

انہوںنے کہاکہ بیرون ملک طاقتیں یہ جانتیں تھیں کہ نواز شریف کو سیاسی محاذ پر شکست نہیں دی جاسکتی لہٰذا انہوں نے پاناما کا ڈرامہ تیار کیا۔سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا کہ 1999 میں پاکستان کو ایٹمی طاقت بنانے کے پاداش میں نواز شریف کو سزا دی گئی جبکہ ان کے حالیہ دورِ حکومت میں انہیں پاک چین اقتصادی راہداری کی پاداش میں سزا دی گئی۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 24/10/2017 - 14:11:57

اپنی رائے کا اظہار کریں