اکتوبر کے قبائلی یلغار میں ریاست بھر میں یوم سیاہ منایاگیا
تازہ ترین : 1

اکتوبر کے قبائلی یلغار میں ریاست بھر میں یوم سیاہ منایاگیا

مظفرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 اکتوبر2017ء) 22اکتوبر کے قبائلی یلغار میں ریاست بھر میں یوم سیاہ منایاگیا اس حوالہ سے کشمیر نیشنل پارٹی کے زیر اہتمام یوم سیاہ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کشمیر نیشنل پارٹی کے زونل صدر میر افضال سلہریا، شریف چوہدری، افتخار عباسی، شعیب گیلانی، اقبال خان، سجاد کشمیری، فیصل سلہریا اور دیگر نے خطا ب کرتے ہوئے کیا کہ22اکتوبر جموں کشمیر کی تاریخ کا انتہائی دردناک اور سیاہ ترین دن تھا جب ایک آزاد اور باوقار ملک جموں کشمیر پر سٹینڈ سٹیل معاہدہ کے باوجود وحشی قبائلیوں کے زریعے قتل و غارت گری کی تاریخ رقم کی گئی ہزاروں افراد کو قتل عورتوں کو اغواء کیا گیا اور بلا تفریق رنگ و نسل ومذہب میں لوٹ مار کی تاریخ رقم کی گئی آزادی پسند رہنماء میر افضال سلہریا نے مزید کہاکہ 22اکتوبر کے اقدام کی وجہ سے 27اکتوبر کو غاصب بھارت نے ریاست پر شب خون مارا اسلیے 22اکتوبر کے قبائلی حملے کی وجہ سے ریاست تقسیم ہو گئی اور آج تک کشمیری سفر کر رہے ہیں اس موقع پر مطالبہ کرتے ہوئے آزادی پسند رہنماؤں نے کہاکہ 47کے قبائلی حملے پر جموں کشمیر کے عوام سے معافی مانگی جائے انھوں نے کہاکہ نیلم ویلی سمیت آزادکشمیر کے مختلف علاقوں سے اغواء ہونیوالے افراد کو فوری طور پر بازیاب کرایا جائے اور ریاستی شہریوں کے بنیادی انسانی حقوق مہیا کیے جائیں آزادی تحریر و تقریب پر پابندی بدترین انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے
وقت اشاعت : 22/10/2017 - 15:51:51

اپنی رائے کا اظہار کریں