مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر سیاسی مفادات کے لیے عدالتوں میں پیش ہو رہے ہیں
تازہ ترین : 1
مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر سیاسی مفادات کے لیے عدالتوں میں پیش ہو رہے ..

مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر سیاسی مفادات کے لیے عدالتوں میں پیش ہو رہے ہیں

نواز شریف کے خلاف عدالتوں نے پہلی مرتبہ فیصلہ دیا ہے جس پر وہ احتجاج کر رہے ہیں اور احتساب عدالت دباؤ میں ہے

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 20 اکتوبر 2017ء): نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے معروف صحافی حامد میر نے کہا کہ احتساب عدالت کی کارروائی اور اس کے نتیجے میں آنے والے فیصلے سے متعلق میں کچھ نہیں کہہ سکتا۔ انہوں نے کہا کہ ابھی میں کچھ نہیں کہہ سکتا ، مجھے احتساب عدالت دباﺅ میں نظر آتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجھے پرستان کی خبر نہیں ہے اور نہ ہی کوئی ایسی پری نظر آتی ہے جو نواز شریف کے پاس آئے گی اور ان کی مطلوبہ خواہشات کی تعبیر ان کے ہاتھ میں دے دے۔

ماضی میں بھی نواز شریف کو ڈیل کر کے ملک سے باہر بھیج دیا جاتا تھا، اور عدالتیں ان کے حق میں فیصلے دیتی رہی ہیں لیکن اب پہلی مرتبہ عدالتوں نے نواز شریف کے خلاف فیصلہ دیا اور اب یہ لوگ اس پر احتجاج کر رہے ہیں۔ حامد میر نے کہا کہ ابھی میں کچھ کہنے کی پوزیشن میں نہیں ہوں، اگر دو ملزمان پیش نہیں ہو رہے تو احتساب عدالت کا قانون کہتا ہے کہ ٹرائل نہیں ہو سکتا۔

جبکہ مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر اپنے سیاسی مفادات کی وجہ پیش ہوتے ہیں۔ حامد میر کا کہنا تھا کہ دوسری جانب کراچی کی احتساب عدالت ایسا نہیں کرتی ، یہ بات قابل غور ہے کہ ملک کا ایک احتساب ادارہ ہے اور اس کے انڈر کام کرنے والی کراچی کی احتساب عدالت اور اسلام آباد کی احتساب عدالت مختلف طریقوں سے کام کرتے ہیں۔ انہوں نے مزید کیا کہا آپ بھی دیکھیں:

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 20/10/2017 - 11:20:30

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں