4 سال کے دوران 14ہزار آٹھ سو ارب روپے قرضہ لیا گیا
تازہ ترین : 1
4 سال کے دوران 14ہزار آٹھ سو ارب روپے قرضہ لیا گیا

4 سال کے دوران 14ہزار آٹھ سو ارب روپے قرضہ لیا گیا

لیکن نہ تو اب تک ملک میں ڈیم بنائے گئے ہیں نہ ہسپتال، آخر یہ پیسہ کہاں گیا؟ عوام حکمرانوں کا گریبان پکڑ کر سوال پوچھیں: صدر مملکت ممنون حسین

بنوں (اردوپوائنٹ تازہ ترین اخبار۔19اکتوبر2017ء) صدر مملکت ممنون حسین کا کہنا ہے کہ 4 سال کے دوران 14ہزار آٹھ سو ارب روپے قرضہ لیا گیا لیکن نہ تو اب تک ملک میں ڈیم بنائے گئے ہیں نہ ہسپتال۔ تفصیلات کے مطابق بنوں میں یونیورسٹی آف سائنس ٹیکنالوجی میں منعقدہ کنوکیشن سے خطاب کرتے ہوئے صدر مملکت ممنون حسین نے کہا کہ 4 سال کے دوران 14ہزار آٹھ سو ارب روپے قرضہ لیا گیا لیکن نہ تو اب تک ملک میں ڈیم بنائے گئے ہیں نہ ہسپتال۔

آخر یہ پیسہ کہاں گیا؟ عوام حکمرانوں کا گریبان پکڑ کر سوال پوچھیں۔ ہمارے ملک کو پچھلے کئی دہائیوں سے کرپشن نے تباہ کر دیا ہے اس ناسور کے خاتمے کیلئے ہمیں کردار ادا کرنا ہو گا ۔ عوام کو یہ حق پہنچتا ہے کہ سوال کریں کہ ہسپتال ،ڈیم ،روز گار ،تعلیم کے نام پر لیا گیا قرضہ کہاں گیا کیونکہ نہ تو اب تک ملک میں ڈیم بنائے گئے ہیں نہ ہسپتال آخر یہ پیسہ کہاں گیا۔ جھوٹ ،مکر ،فریب اور مداری کی سیاست نے ملک کو بہت زیادہ نقصان پہنچا یا ہے۔ لیکن یا د رہے جس نے جتنا اس ملک کو لوٹا ہے نقصان پہنچا یا ہے اس کا بدلہ بھی اللہ اس سے لے گا ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 19/10/2017 - 21:40:11

اپنی رائے کا اظہار کریں