کے الیکٹرک کی جانب سے واٹربورڈ کے پمپنگ اسٹیشن پر منظور شدہ وقت سے زائد تک کئے ..
تازہ ترین : 1

کے الیکٹرک کی جانب سے واٹربورڈ کے پمپنگ اسٹیشن پر منظور شدہ وقت سے زائد تک کئے جانے والے بریک ڈاؤ ن کے باعث طویل عرصہ تک فراہمی آب بند رہنے کی وجہ سے شہر کے مختلف علاقوں میں پانی کی قلت پیدا ہوگئی ہے ،کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اکتوبر2017ء)نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی کے ترقیاتی کام کے باعث کے الیکٹرک کی جانب سے پیر کو دھابیجی پمپنگ اسٹیشن پر تقریباً16گھنٹے بعد بجلی بحال کی گئی جبکہ گھارو پمپنگ اسٹیشن پر 24گھنٹے بعد منگل کی صبح5:30بجے بجلی بحال کی گئی جس کے بعد گھارو پمپنگ اسٹیشن سے کراچی کو پانی کی فراہمی شروع کی جاسکی،کے الیکٹرک کی جانب سے واٹربورڈ کے پمپنگ اسٹیشن پر منظور شدہ وقت سے زائد تک کئے جانے والے بریک ڈاؤ ن کے باعث طویل عرصہ تک فراہمی آب بند رہنے کی وجہ سے شہر کے مختلف علاقوں میں پانی کی قلت پیدا ہوگئی ہے ،ایم ڈی واٹربورڈ نے صورتحال میں بہتری کیلئے واٹربورڈحکام کو ہدایت کی ہے کہ وہ شہر کے تمام علاقوں میںبلاکسی امتیازدستیاب پانی کی منصفانہ فراہمی کیلئے تمام تر وسائل بروئے کار لائیں ،تفصیلات کے مطابق پیر کو کے الیکٹرک نے نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی کی جانب سے ترقیاتی کام کے باعث واٹربورڈ کے دھابیجی اور گھاروپمپنگ اسٹیشن کو بجلی کی فراہمی پیر کی صبح 6 بجے بند کی تھی شیڈول کے مطابق بجلی کی فراہمی شام 6 بجے بحا ل کی جانی تھی تاہم پیر کی رات 9:20 بجے صرف دھابیجی پمپنگ اسٹیشن کی بجلی بحال کی گئی جبکہ گھارو پمپنگ اسٹیشن کی بجلی منگل کی صبح5:30بجے بحال کی گئی اس سبب کراچی کو پانی کی فراہمی میں مزید وقت لگا اور 480 ملین گیلن سے زائد پانی کی فراہمی نہیں کی جاسکی ، واضح رہے گھارو اور دھابیجی پمپنگ اسٹیشنوں سے طویل عرصہ تک پانی کی فراہمی بند رہنے سے شہر کے مختلف علاقوں میں قلت آب کی صورتحال ہے ،شہر کے آخری سرے تک پانی پہنچنے میں مزید ایک روز درکار ہوسکتا ہے ایم ڈی واٹربورڈ نے اس صورتحال کا نوٹس لیتے ہوئے واٹربورڈ حکام کو ہدایت کی ہے کہ وہ فوری طور پر دستیاب پانی کی بلاامتیاز و منصفانہ تقسیم کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات کریں،والوو سسٹم کی کڑی نگرانی کی جائے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 17/10/2017 - 23:00:00

اپنی رائے کا اظہار کریں