کیپٹن (ر) صفدر کا بیان سنا ہے،تمام اداروں کی طرح فوج میں بھی ہر مسلمان فوجی سرٹیفکیٹ ..
تازہ ترین : 1
کیپٹن (ر) صفدر کا بیان سنا ہے،تمام اداروں کی طرح فوج میں بھی ہر مسلمان ..

کیپٹن (ر) صفدر کا بیان سنا ہے،تمام اداروں کی طرح فوج میں بھی ہر مسلمان فوجی سرٹیفکیٹ سائن کرتا ہے

یہی سرٹیفکیٹ میں نے اور ہر مسلمان فوجی آفیسر نے سائن کیا ہے ،کیپٹن (ر)صفدر نے بھی سرٹیفکیٹ پر سائن کیا ہے،پاکستانی سرحد کے اندر امریکی یا افغان فورسز کے ساتھ مل کر مشترکہ آپریشن کبھی نہیں ہوسکتا ، ہم بہت باصلاحیت فوج ہیں اور ہر طرح کے آپریشن کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں ،ہمارے پاس سیکیورٹی کی تمام صلاحیت موجود ہے ، اپنی سرزمین پر کبھی بھی کسی غیر ملکی فورسز کو داخل ہونے کی اجازت نہیں دیں گے ،پاکستان سمیت خطے میں سیکیورٹی اور استحکام کیلئے ملکر کام کرنا ڈومور کے تناظر میں نہیں ہے ، ملکی معیشت اگر بری نہیں تو اچھی بھی نہیں ہے ،مل بیٹھ کر ملکی معیشت پر بات چیت کی ضرورت ہے ،آرمی چیف نے ملکی معیشت کو بہتر کرنے کیلئے تجاویز دی ہیں ،پاک فوج نے پانچ غیر ملکیوں کو بازیاب کرایا ہے، دہشت گردوں نے مغویوں کوبراستہ کرم ایجنسی پاکستان منتقل کیا تھا ، پاکستانی فورسز نے خفیہ اطلاع پر کامیاب آپریشن کیا ، گزشتہ شام 4بجے ہمارے ساتھ انٹیلی جنس شیئرنگ کی گئی تھی ،اگر انٹیلی جنس شیئرنگ ہوگی تو دہشت گردی کا خاتمہ ہوگا ، ڈی جی آئی ایس پی آرمیجر جنرل آصف غفور کی نجی ٹی وی سے گفتگو

راولپنڈی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 اکتوبر2017ء) پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ فوج میں خاص مسلک کے لوگوں کی بھرتیوں پر پابندی نہیں، پاک فوج میں عیسائی ، قادیانی اور سکھ بھی ہیں ، کیپٹن (ر) صفدر کا بیان سنا ہے،تمام اداروں کی طرح فوج میں بھی ہر مسلمان فوجی سرٹیفکیٹ سائن کرتا ہے ،یہی سرٹیفکیٹ میں نے اور ہر مسلمان فوجی آفیسر نے سائن کیا ہے ،کیپٹن (ر)صفدر نے بھی سرٹیفکیٹ پر سائن کیا ہے،پاکستانی سرحد کے اندر امریکی یا افغان فورسز کے ساتھ مل کر مشترکہ آپریشن کبھی نہیں ہوسکتا ، ہم بہت باصلاحیت فوج ہیں اور ہر طرح کے آپریشن کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں ،ہمارے پاس سیکیورٹی کی تمام صلاحیت موجود ہے ، اپنی سرزمین پر کبھی بھی کسی غیر ملکی فورسز کو داخل ہونے کی اجازت نہیں دیں گے ،پاکستان سمیت خطے میں سیکیورٹی اور استحکام کیلئے ملکر کام کرنا ڈومور کے تناظر میں نہیں ہے ، ملکی معیشت اگر بری نہیں تو اچھی بھی نہیں ہے ،مل بیٹھ کر ملکی معیشت پر بات چیت کی ضرورت ہے ،آرمی چیف نے ملکی معیشت کو بہتر کرنے کیلئے تجاویز دی ہیں ،پاک فوج نے پانچ غیر ملکیوں کو بازیاب کرایا ہے، دہشت گردوں نے مغویوں کوبراستہ کرم ایجنسی پاکستان منتقل کیا تھا ، پاکستانی فورسز نے خفیہ اطلاع پر کامیاب آپریشن کیا ، گزشتہ شام 4بجے ہمارے ساتھ انٹیلی جنس شیئرنگ کی گئی تھی ،اگر انٹیلی جنس شیئرنگ ہوگی تو دہشت گردی کا خاتمہ ہوگا ۔

جمعرات کو ایک نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ پاک فوج نے پانچ غیر ملکیوں کو بازیاب کرایا لیا ہے جن میں کینیڈین شہری ان کی بیوی اور تین بچے شامل ہیں ، افغان دہشت گردوں نے 2012میں اس غیر ملکی خاندان کو اغوا کیا تھا ، دہشت گردوں نے مغویوں کوبراستہ کرم ایجنسی پاکستان منتقل کیا تھا ، پاکستان فورسز نے خفیہ اطلاع پر کامیاب آپریشن کیا ، کل شام 4بجے ہمارے ساتھ انٹیلی جنس شیئرنگ ہوئی ، یہ ایک اچھا آپریشن ہوا ،اگر انٹیلی جنس شیئرنگ ہوگی تو دہشت گردی کا خاتمہ ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے اپنے ملک میں جوکرنا تھا کر لیا ،آج کے آپریشن کا امریکیوں نے بھی اعتراف کیا ،طالبان کینیڈین خاندان کو افغانستان سے پاکستان منتقل کر رہے تھے۔جنرل آصف غفور نے کہا کہ متعدد ممالک دہشت گردی کا سامنا نہیں کرسکے ،ہماری فوج میں تمام صلاحیت موجود ہے ،فوج میں پابندی نہیں کہ اس میں خاص مسلک کے لوگ رہیں گے ، پاک فوج میں عیسائی ،ہندو اور سکھ بھی ہیں ، ملک کی سیکیورٹی اور معیشت کا گہرا تعلق ہے ،ملکی حالات ٹھیک نہ ہونے پر معیشت متاثر ہوتی ہے ،پاک فوج ملکی سیکیورٹی معاملات کو دیکھتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ملکی معیشت اگر بری نہیں تو اچھی بھی نہیں ہے ،مل بیٹھ کر ملکی معیشت پر بات چیت کی ضرورت ہے ،آرمی چیف نے ملکی معیشت کو بہتر کرنے کیلئے تجاویز دی ہیں۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہاکہ فوج میں خاص مسلک کے لوگوں کی بھرتیوں پر پابندی نہیں، پاک فوج میں عیسائی ، قادیانی اور سکھ بھی ہیں ، کیپٹن (ر) صفدر کا بیان سنا ہے، اگر فیصلہ سازی کرنے والے کوئی قانون لیکر آتے ہیں تو پھر بعد کی بات ہے۔

تمام اداروں کی طرح فوج میں بھی ہر مسلمان فوجی سرٹیفکیٹ سائن کرتا ہے ،یہی سرٹیفکیٹ میں نے اور ہر مسلمان فوجی آفیسر نے سائن کیا ہے ،کیپٹن (ر)صفدر نے بھی سرٹیفکیٹ پر سائن کیا ہے۔جب ہم یونیفارم پہنتے ہیں تو صرف پاکستانی ہیں، ہر اہلکار ڈکلیئر کرتا ہے کہ وہ احمدی یا قادیانی نہیں ہے ، ہر اہلکار ختم نبوتؐ پر یقین رکھتا ہے ۔پاکستانی سرحد وںکے اندر امریکی یا افغان فوجی دستوں کیساتھ مل کر آپریشن کرنے کے حوالے سے ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ ایسا کبھی نہیں ہوسکتا کیونکہ ہمارے پاس بہت باصلاحیت فوج ہے اور ہم ہر طرح کے آپریشن کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں ۔

انھوںنے کہاکہ جب بہت سے ملکوں میں دہشت گردی آئی تو جن ممالک کی سیکیورٹی فورسز کمزور تھیں ان ملکوں کے حالات خراب ہوئے یا ان کے اندر غیر ملکی فورسز آگئیں جس کی افغانستان ایک مثال ہے ،ہمارے پاس سیکیورٹی کی تمام صلاحیت موجود ہے ، ہم اپنی سرزمین پر کبھی بھی کسی غیر ملکی فورسز کو داخل ہونے کی اجازت نہیں دیں گے ،خطے میں سیکیورٹی اور استحکام کیلئے ملکر کام کرنا ڈومور کے تناظر میں نہیں ہے ،یہ ایک تعاون ہے جس کے ذریعے باقی مانندہ مسائل کو ختم کیا جا سکے ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/10/2017 - 23:40:32

اپنی رائے کا اظہار کریں