حکومت برآمدکنندگان کیلئے انتہائی سازگار فضائ پیدا کرنا چاہتی ہے برآمدکنندگان ..
تازہ ترین : 1
حکومت برآمدکنندگان کیلئے انتہائی سازگار فضائ پیدا کرنا چاہتی ہے برآمدکنندگان ..

حکومت برآمدکنندگان کیلئے انتہائی سازگار فضائ پیدا کرنا چاہتی ہے برآمدکنندگان اپنی تمام تر توجہ برآمدات بڑھانے پر دیں ان کے ذریعے ہی ہم پاکستان کو معاشی طور پر مضبوط اور مستحکم بنا سکتے ہیں،

ٹیکسٹائل کو پاکستان کی مجموعی برآمدات میں کلیدی اہمیت حاصل ہے، وزیراعظم نے یقین دہانی کرائی کہ حکومت ٹیکسٹائل کی برآمدات کو بڑھانے کیلئے ہر ممکن آسانیاں پیدا کرنے کے علاوہ انہیں ضروری مراعات بھی دے گی، پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے وفد کی وزیراعظم سے ملاقات بارے تفصیلات بتاتے ہوئے گفتگو

اسلام آباد/فیصل آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 اکتوبر2017ء) پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے رہنما?ں نے کہاہے کہ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے ملاقات میں یقین دہانی کرائی کہ حکومت برآمدکنندگان کیلئے انتہائی سازگار فضائ پیدا کرنا چاہتی ہے برآمدکنندگان اپنی تمام تر توجہ برآمدات بڑھانے پر دیں کیونکہ ان کے ذریعے ہی ہم پاکستان کو معاشی طور پر مضبوط اور مستحکم بنا سکتے ہیں ٹیکسٹائل کو پاکستان کی مجموعی برآمدات میں کلیدی اہمیت حاصل ہے یہی وجہ ہے کہ حکومت نے 180 ارب روپے کے ٹیکسٹائل پیکیج کے اعلان کے بعد برآمدات میں گزشتہ سال کی نسبت دس فیصد اضافہ کی شرط بھی ختم کر دی حکومت ٹیکسٹائل کی برآمدات کو بڑھانے کیلئے برآمدکنندگان کیلئے ہر ممکن آسانیاں پیدا کرنے کے علاوہ انہیں ضروری مراعات بھی دے گی اس سلسلہ میں ٹیکسٹائل پیکیج کے تحت 7 فیصدمراعات کیلئے دس فیصد اضافہ کی شرط کو ختم کرنے کیلئے ایس آر او آئندہ چند روز تک جاری کر دیا جائیگا۔

جمعرات کو فیڈریشن آ ف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ایک وفد نے وزیراعظم سے ملاقات کی جس دوران وفد کے رہنما? ں نے تفصیلات بتاتے ہوئے بتایا کہ وزیر اعظم نے کہا کہ اس کیلئے اعلیٰ سطح پر ضروری اقدامات بھی اٹھائے جا رہے ہیں انہوں نے برآمدکنندگان سے کہا کہ وہ اپنے مسائل فوری طور پر ان کے نوٹس میں لائیں تا کہ انہیں حل کرنے کیلئے ضروری ہدایات جاری کی جا سکیں ریگولیٹری ڈیوٹی کے بارے میں وزیر اعظم نے کہا کہ فی الحال حکومت ان اشیائ کی نشاندہی کرنے پر غور کر رہی ہے جن پر ریگولیٹری ڈیوٹی نافذ کی جا سکتی ہے تا ہم انہوں نے برآمدکنندگان کو یقین دلایا کہ حکومت کوشش کرے گی کہ ریگولیٹری ڈیوٹی کے نفاذ سے قبل تاجروں کے نمائندوں سے مشاورت کر لی جائے۔

میاں محمد ادریس نے بتایا کہ وزیر اعظم نے یقین دلایا ہے کہ یکم جولائی سے 30 دسمبر2017 تک کیلئے نوٹیفیکیشن جلد جاری کیا جا رہا ہے جس کے تحت 10 فیصد اضافے کی شرط کو بھی ختم کر دیا جائیگا فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی نمائندگی کرتے ہوئے سابق صدر انجینئر محمد سعید شیخ نے بتایا کہ فیصل آباد کو ٹیکسٹائل کی برآمدات میں کلیدی حیثیت حاصل ہے اور اس سلسلہ میں کسی بھی غلط فیصلے سے سب سے پہلے اور زیادہ یہی شہر متاثر ہوتا ہے انہوں نے کہا کہ ٹیکسٹائل پیکیج کی وجہ سے برآمدات میں بتدریج کمی کا سلسلہ رک گیا ہے تاہم ضرورت اس امرکی ہے کہ ٹیکسٹائل پیکیج کے تحت مراعات کے سلسلہ میں بھی ایس آر او فی الفور جاری کیا جائے انہوں نے فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے اس مطالبے کو بھی دوہرایا کہ صنعتی خام مال پر ریگولیٹری ڈیوٹی کا ہر گز نفاذ نہیں ہونا چاہیئے کیونکہ اس کی وجہ سے برآمدات پر مزید منفی اثر پڑے گا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/10/2017 - 23:31:40

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں