سپریم کورٹ کے فیصلہ سے عالمی سطح پر نوازشریف کی بدنامی اور پاکستان کا امیج بہتر ..
تازہ ترین : 1
سپریم کورٹ کے فیصلہ سے عالمی سطح پر نوازشریف کی بدنامی اور پاکستان ..

سپریم کورٹ کے فیصلہ سے عالمی سطح پر نوازشریف کی بدنامی اور پاکستان کا امیج بہتر ہوا، چودھری پرویزالٰہی

عوام عدلیہ اور فوج کے خلاف چور اور نااہل وزیراعظم کی کال پر باہر نہیں آئیں گے، ریلی میں بھی غریبوں کو روندتے رہے آئین میں وزیراعظم نہیں اسمبلی کی مدت درج ہے یہ ملک میں جنگل کا قانون چاہتے ہیں نااہلی کے بعد انقلاب یاد آ گیا ْمسلم لیگ ق کے سینئرمرکزی رہنما و سابق نائب وزیراعظم چودھری پرویزالٰہی کی میڈیا سے گفتگو

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 اگست2017ء) پاکستان مسلم لیگ ق کے سینئرمرکزی رہنما و سابق نائب وزیراعظم چودھری پرویزالٰہی نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلہ سے عالمی سطح پر نوازشریف کی بدنامی اور پاکستان کا امیج بہتر ہوا، نوازشریف اپنی کار ریلی میں بھی غریبوں کو روندتے رہے اور ہر جگہ لوگوں سے غلط بیانی سے کام لیا، آئین میں وزیراعظم کی نہیں اسمبلی کی مدت درج ہے یہ عوام کو سپریم کورٹ اور فوج کے خلاف نکالنا چاہتے ہیں لیکن لوگ چور اور نااہل وزیراعظم کی کال پر باہر نہیں آئیں گے۔

انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کل ایک معصوم لڑکے سمیت دو افراد کو کچل دیا آج گوجرانوالہ میں بھی ایک شخص کو روند کر اپاہج بنا دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ نوازشریف بار بار کہتے ہیں کہ مجھے مدت پوری نہیں کرنے دی گئی حالانکہ یہ مسلسل تیسری اسمبلی ہے جو آئین میں دی گئی اپنی مدت پوری کرنے جا رہی ہے اور ان کی نااہلی کے بعد بھی ان کی پارٹی کی حکومت ہے، وہ سپریم کورٹ کے بارے میں بھی غلط بیانی کر رہے ہیں، دو جج صاحبان نے کہا تھا کہ وہ صادق اور امین نہیں پھر تین ججوں نے پہلے والے دو ججوں کے ساتھ مل کر ان کی نااہلی کا متفقہ فیصلہ دیا۔

چودھری پرویزالٰہی نے مزید کہا کہ سپریم کورٹ میں نوازشریف کی چوری اور کرپشن سامنے آنے سے ان کی دنیا بھر میں بدنامی اور جگ ہنسائی ہو رہی ہے جبکہ پاکستان کا امیج اور وقار بہتر ہوا ہے، اسلام آباد میں مختلف غیر ملکی سفیروں نے میرے ساتھ بات چیت میں اس فیصلہ کو تاریخی قرار دیا، اللہ تعالیٰ نے نوازشریف کو تین بار موقع دیا لیکن تینوں بار ناکام رہے، ملک کا تجارتی خسارہ اور قرضے اس وقت ریکارڈ سطح پر ہیں۔

چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ نوازشریف اور شہبازشریف 25 سال سے حکومت کر رہے ہیں لیکن یہ عوام کیلئے کچھ کرنے میں ناکام رہے اب نااہلی کے بعد پھر انقلاب کی بات کر رہے ہیں جبکہ 25 سال میں تو انقلاب نہیں لا سکے، نوازشریف کے اپنے حلقے گوالمنڈی میں واقع میو ہسپتال میں میرا قائم کردہ ساڑھے چار سو بیڈ پر مشتمل ایمرجنسی بلاک ان کی نالائقی کی وجہ سے اب تک چالو نہیں ہو سکا۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ یوسف رضا گیلانی کے بارے میں نوازشریف کہتے تھے کہ جنگل کا قانون نہیں ہے، اب یہ ریلی میں پٹواری، تحصیل دار سرکاری ملازم اکٹھے کر کے جنگل کا قانون لانا چاہتے ہیں جب تک احتجاج کا کوئی مسئلہ نہ ہو، احتجاج نہیں ہوتا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/08/2017 - 18:08:48

اپنی رائے کا اظہار کریں