گاڈ فادر ہو یا چھوٹا ڈان جے آئی ٹی میں پیش ہوکر عجیب باتیں کرتے ہیں، بلاول بھٹو ..
تازہ ترین : 1
گاڈ فادر ہو یا چھوٹا ڈان جے آئی ٹی میں پیش ہوکر عجیب باتیں کرتے ہیں، ..

گاڈ فادر ہو یا چھوٹا ڈان جے آئی ٹی میں پیش ہوکر عجیب باتیں کرتے ہیں، بلاول بھٹو زرداری

میاں صاحب کو قوم کی فکر نہیں بس پانامہ کمپنیاں بچانا چاہتے ہیں،خان صاحب کی تبدیلی ٹیوٹر تک محدود ہے، میڈیا سے گفتگو کہتے ہیں مشرف کے دور میں کڑا احتساب ہوا، کیا احتساب یہ تھا کہ آپ معافی مانگ کر ملک سے چلے گئے

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 جون2017ء) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ گاڈ فادر ہو یا چھوٹا ڈان جے آئی ٹی میں پیش ہوکر عجیب باتیں کرتے ہیں۔ میاں صاحب کو قوم کی فکر نہیں بس پانامہ کمپنیاں بچانا چاہتے ہیں،خان صاحب کی تبدیلی ٹیوٹر تک محدود ہے ۔وہ سندھ حکومت کی جانب سے نیشنل ہائے وے پر منزل پمپ کے مقام پر تعمیر کیے گئے فلائی اوور کا افتتاح کے موقع ہر میڈیا سے گفتگو کررہے تھے ۔

بلاول بھٹوزرداری نے کہا ہے کہ کہتے ہیں مشرف کے دور میں کڑا احتساب ہوا، کیا احتساب یہ تھا کہ آپ معافی مانگ کر ملک سے چلے گئے۔گاڈ فادر یا چھوٹا ڈان جے آئی ٹی میں پیش ہوکر عجیب باتیں کرتے ہیں۔بے نظیر بھٹو کے دور میں ان کے احتساب کی باتیں کرتے ہیں۔نواز شریف معافی نامہ لکھ کر ملک سے بھاگے تھے۔میاں صاحب کو قوم کی فکر نہیں بس پانامہ کمپنیاں بچانا چاہتے ہیں ۔

قوم انصاف کی منتظر ہے ۔انھوں نے عمران خان پرتنقید کرتے ہوئے کہا کہخان صاحب کی تبدیلی ٹیوٹر تک محدود ہے۔پی ٹی آئی نے کے پی کے میں محمکہ صحت نجی شعبے کو دے کر بیڑا غرق کردیا ہے ۔انھوں نے کہا کہ میں کراچی میں ترقیاتی سرگرمیوں پر سندھ حکومت سے بہت خوش ہوں۔کراچی صفائی کا نظام بھی بہتر ہوتا جارہا ہے۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ آئندہ انتخابات میں پی پی کو کراچی سے حصہ ملے گا۔

انھوں نے کہا کہ سندھ میں ریکارڈ مدت میں ترقیاتی منصوبے مکمل ہورہے ہیں۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ نیشنل ہائی وے پر منزل پمپ فلائی اوور کے افتتاح سے صنعتی علاقوں کے ہیوی ٹریفک اور ائیر پورٹ سے نیشنل ہائی وے سگنل فری ٹریفک ہوجائے گااور ٹریفک کی روانی بھی بہتر ہوجائے گی۔ انھوں نے کہا کہ ایئرپورٹ سے منزل پمپ سڑک کو سگنل فری بنایا گیا ہے۔

یہ فلائی اوور 514.917ملین روپے کی لاگت سے 3ماہ کی مدت میں تعمیر کیاگیاہے جو کہ ایک ریکارڈ ہے۔ انھوں نے اس کے لیے صوبائی وزیربلدیات جام خان شورو، پروجیکٹ ڈائریکٹر نیاز سومرو اور ان کی ٹیم کو مبارک باد دی۔انھوں نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی کے مخالفین اپنے آپ کو غیر محفوظ محسوس کررہے ہیں کیونکہ ان کی حکومت نے شہر میں انفرااسٹرکچرکی میگا اسکیمیں شروع کی ہیں اور ان میں سے بہت سی اسکیموں کا یا تو افتتاح ہوچکا ہے یا پھر اس ماہ کے آخر تک افتتاح ہوجائے گا۔

صوبائی وزیر بلدیات جام خان شورو نے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ منزل پمپ فلائی اوور پر 8مارچ 2017کو کام کا آغازہوا اور اس پر 514.917ملین روپے لاگت آئی اور یہ 3ماہ کی مدت میں مکمل ہواہے اس پل کی لمبائی 560میٹر ہے ،جس میں 250میٹر پل اور 310میٹر ریمپ شامل ہے۔ اس کی چوڑائی 10.9میٹرہے اور یہ 3رویہ ہے۔ وزیرا علی سندھ نے کہا کہ ڈرگ روڈ انڈر پاس اور سب میرین چورنگی انڈر پاس پر کام جنگی بنیادوں پر جاری ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم اس ماہ کے آخر تک ڈرگ روڈ انڈر پاس کا افتتاح کردیں گے۔انھوں نے کہا کہ یہ کراچی کے انفرااسٹرکچر کی ترقی میں ایک بہت بڑا بریک تھرو ہے۔انھوں نے کہا کہ شاہراہ فیصل کونہ صرف یہ کہ دوبارہ تعمیر کیاگیا ہے بلکہ بلوچ کالونی فلائی اوور کی آلٹریشن کے ذریعے شاہراہ کو توسیع بھی دی گئی ہے۔انھو ں نے کہا کہ اس سے نہ صرف یہ کہ شاہراہ فیصل بہتر ہوگئی ہے بلکہ اس پر ٹریفک کا بہا بھی بہتر ہوگیا ہے۔ قبل ازیں صوبائی وزرا سید ناصر حسین شاہ ،امداد پتافی، فیاض بٹ اور مکیش کمار چالہ نے سہ پہر منزل پمپ فلائی اور کے افتتاح کے سلسلے میں کئے گئے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 19/06/2017 - 23:18:04

اپنی رائے کا اظہار کریں