عیدالفطر2017 ہنگامی پلان کی فوری ترتیب اور عمل درآمد کے تمام تر اقدامات یقینی بنائے ..
تازہ ترین : 1

عیدالفطر2017 ہنگامی پلان کی فوری ترتیب اور عمل درآمد کے تمام تر اقدامات یقینی بنائے جائیں،آئی جی سندھ

قانون نافذ کرنے والے ادارے ، انٹیلی جینس ایجینسیوں سے مربوط روابط کے تحت تمام مرکزی مساجد ، امام بارگاہوں ، عید گاہوں کے فول پروف سیکورٹی اقدامات اٹھائے جائیں، اعلی سطحی اجلاس سے خطاب

عیدالفطر2017 ہنگامی پلان کی فوری ترتیب اور عمل درآمد کے تمام تر اقدامات ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 جون2017ء)انسپکٹر جنرل پولیس سندھ اے ڈی خواجہ نے پولیس کو ہدایات جاری کی ہیں کہ امن و امان کی صورتحال اور اس حوالے سے سیکیورٹی لائحہ عمل و حکمت عملی کو مدنظر رکھ کر پولیس رینج کی سطح پر عیدالفطر سال 2017ء کا سیکیورٹی پلان مرتب کرتے ہوئے عمل درآمد کے مجموعی امور کو انتہائی ٹھوس و مربوط بنایا جائے۔ترجمان کے مطابق آئی جی سندھ نے کہاکہ قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں ، انٹیلی جینس ایجینسیوں سے مربوط روابط کے تحت تمام مرکزی مساجد ، امام بارگاہوں ، عید گاہوں ودیگر کھلے مقامات کہ جہاں نماز عید کے اجتماعات ہوں گے پر اور ان کے علاوہ آغا خانی ، بوہری ، اسماعیلی سمیت قادیانیوں کی عبادت گاہوں پر بھی تھانوں کی سطح پر ناصرف فول پروف سیکیورٹی اقدامات کو ہنگامی پلان میں شامل کیا جائے بلکہ تمام پبلک مقامات بشمول شاپنگ سینٹرز ، عید بچت بازاروں ، ریلوے اسٹیشنوں ، بس ٹرمینلزوغیرہ پر بھی غیرمعمولی سیکیورٹی اقدامات عید ہنگامی پلان کے تحت یقینی بنائیں جائیں۔

انہوں نے کہا کہ مرتب کردہ ہنگامی پلان کے تحت تمام ایس پیز ، ایس ڈی پی اوز اور ایس ایچ اوز خصوصی احکامات کے پیش نظر موبائل گشت ، موٹر سائیکل گشت کے ساتھ ساتھ اس امر کو بھی یقینی بنائیں گے کے پیٹرولنگ روٹس میں نماز عید کے اجتماعات مساجد ، امام بارگاہوںکو موٴْ ثر طور پر کور کیا گیا ہے۔آئی جی سندھ نے کہا کہ تھانوں کی سطح پر سرویلینس ٹیموں کی تشکیل اور ان کی شاپنگ سینٹرز ، پرہجوم پبلک مقامات ، کار موٹر سائیکل پارکنگ لاٹس اور نماز عید کے کھلے مقامات کے اندرونی اور اطراف کے حصوں میں تعیناتیوں کو مرتب کردہ منصوبے کا حصہ بنایا جائے۔

آئی جی سندھ نے کہا کہ تیار کیے جانیوالے عیدالفطر سیکیورٹی پلان میں تمام ضلعی ایس ایس پیز اپنے اپنے علاقوں میں معززین علاقہ و معروف سیاسی و مذہبی شخصیات کے تعاون سے قابل اعتراض یا دل آزار وال چاکنگ ،پوسٹرز ، پمفلیٹس و لٹریچرز کی تقسیم کی روک تھام کو ناصرف یقینی بنائیں گے بلکہ ایسے عناصر کے خلاف سخت قانونی کاروئی کے لیے بھی تمام ضروری اقدامات کو ممکن بنائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ صوبے میں قیام امن کے اقدامات کی موٴْثر طور پر مانیٹرنگ کے لیے پولیس رینج کی سطح پر مرکزی کنٹرول رومز کے قیام کو سیکیورٹی پلان کا حصہ بنایا جائے جو پولیس کے دیگر وائرلیس کنٹرول رومز سے مسلسل رابطے میں رہتے ہوئے عیدالفطر کے تینوں دنوں میں سیکیورٹی کی مجموعی صورتحال کا ریکارڈ ترتیب دیں گے اوروقتاً فوقتاً جاری ضروری احکامات کے تحت سیکیورٹی کو مذید سخت اور غیر معمولی بنائیں گے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 19/06/2017 - 20:58:46

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں