ایف بی آر کی جائیداد ایمسنٹی اسکیم سے چھ ماہ میں 72 ارب روپے کا کالا دھن سفید ہوگیا
تازہ ترین : 1
ایف بی آر کی جائیداد ایمسنٹی اسکیم سے چھ ماہ میں 72 ارب روپے کا کالا ..

ایف بی آر کی جائیداد ایمسنٹی اسکیم سے چھ ماہ میں 72 ارب روپے کا کالا دھن سفید ہوگیا

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 جون2017ء)ایف بی آر کی جائیداد ایمسنٹی اسکیم سے چھ ماہ میں 72 ارب روپے کا کالا دھن سفید ہوگیا۔ اسکیم سے ایف بی آر کو دو ارب دس کروڑ روپے کا ریونیو بھی ملا ۔فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے ٹیکس نیٹ سے باہر رقم کو نیٹ میں لانے کے لئے جائیداد پر ٹیکس ایمسنٹی اسکیم 6 دسمبر 2016 سے متعارف کرائی تھی۔ایف بی آر کا کہنا ہے کہ اسکیم کامیابی سے جاری ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق اسکیم کے چھ ماہ میں 72 ارب روپے کا کالا دھن سفید کیا جاچکا ہے۔اسکیم کے تحت 6 دسمبر 2016 سے 31 مئی 2017 تک 72 ہزار جائیداد وں کی ٹرانزیکشن پر فائدہ اٹھایا گیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ مئی 2017 میں جائیداد کی ایمنسٹی اسکیم سے 16 ارب روپے کی رقم ٹیکس نیٹ کا حصہ بن چکی ہے۔ذرائع کے مطابق اسکیم سے 6 ماہ میں حکومت کو 2 اعشاریہ 1 ارب روپے کا ریونیو بھی ملا ہے۔ذرائع ایف بی آر کے مطابق ایمنسٹی اسکیم کے تحت جائیداد پر ایف بی آر کی نئی ویلیوایشن اور ڈی سی ویلیو کے فرق پر 3 فیصد ادا کرکے ٹیکس نیٹ میں شامل ہوسکتے ہیں۔
وقت اشاعت : 19/06/2017 - 16:41:12

اپنی رائے کا اظہار کریں