وفاقی حکومت نےمارچ2018ءمیں بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم کرنےکی خوشخبری سنادی
تازہ ترین : 1
وفاقی حکومت نےمارچ2018ءمیں بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم کرنےکی خوشخبری سنادی

وفاقی حکومت نےمارچ2018ءمیں بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم کرنےکی خوشخبری سنادی

دسمبر2017ء تک سسٹم میں5710میگاواٹ جبکہ مارچ 2018ءمیں مزید2200میگاوٹ بجلی شامل ہوجائیگی،تاہم اگلےسال مارچ میں نیشنل گریڈسسٹم میں 7910میگاواٹ بجلی شامل ہوگی،جس کیساتھ ملک میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کاخاتمہ کردیاجائیگا۔وزیراعظم نوازشریف کوبجلی بحران کے خاتمے پربریفنگ

اسلام آباد(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔آئی پی اے۔21اپریل2017ء): وفاقی حکومت نے عوام کو مارچ 2018ء میں بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم کرنے کی خوشخبری سنادی،اگلے سال مارچ میں نیشنل گریڈسسٹم میں 7910میگاواٹ بجلی شامل ہوگی،جس کے باعث ملک میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کاخاتمہ کردیاجائیگا۔میڈیارپورٹس کے مطابق وزیراعظم نوازشریف کی زیرصدارت اجلاس میں توانائی بحران کے خاتمے کیلئے بھی بریفنگ دی گئی۔

حکومت نے عوام کوخوشخبری دینے کاتہیہ کرتے ہوئے کہا کہ مارچ 2018ء تک ملک میں بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم کردی جائیگی۔دسمبر 2017ء تک نیشنل گریڈسسٹم میں بجلی کی پیداوار5710میگاواٹ شامل ہوگی۔جبکہ مارچ 2018ء میں سسٹم میں مزید2200میگاوٹ بجلی شامل ہوجائے گی۔مزیدبرآں مئی میں گدو335میگاواٹ،جون میں چشمہ پاورپلانٹ سے ،جبکہ پورٹ قاسم پاورپلانٹ گرڈون سے 660میگاواٹ بجلی سسٹم میں شامل ہوگی۔

اس موقعہ پراجلاس میں پاناماکیس فیصلے سے متعلق مشاورت بھی کی گئی،اجلاس میں پاناما کیس فیصلے پرقانونی ماہرین نے وزیراعظم کوبریفنگ دی۔میڈیارپورٹس کے مطابق اجلاس میں وفاقی وزراء اور قانونی ماہرین نے بھی شرکت کی۔اجلا س میں جے آئی ٹی سے متعلق آئندہ کی حکمت عملی بھی طے کی گئی۔وزیراعظم نوازشریف نے کہا کہ اپوزیشن انتشارچاہتی ہے لیکن کامیاب نہیں ہوگی۔عدالتوں کے فیصلوں کااحترام کرتے ہیں۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

اس خبر نوں پنجابی وچ پڑھو
وقت اشاعت : 21/04/2017 - 19:07:51

اپنی رائے کا اظہار کریں