لاہور، 295-Cکو چھیڑنے والی حکومت ایک منٹ بھی نہیں چلنے دیں گے ،عالمی مجلس تحفظ ختم ..
تازہ ترین : 1

لاہور، 295-Cکو چھیڑنے والی حکومت ایک منٹ بھی نہیں چلنے دیں گے ،عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اپریل2017ء) 295-Cکو چھیڑنے والی حکومت ایک منٹ بھی نہیں چلنے دیں گے۔حکومت کو قا نون ناموس رسالت سے چھیڑ چھاڑ مہنگی پڑے گی۔ توہین مذہب کے مجرموں کے خلاف قانون حرکت میں نہ آنے کی وجہ سے سانحات رونما ہوتے ہیںیہی وجہ ہے کہ آج تک کسی ایک بھی گستاخ رسول کو سزا نہیں دی گئی۔ ناموس رسالت کے مسئلہ پر کو ئی بھی مسلمان مصلحت کا شکار نہیں ہوسکتا۔

عاشقان رسول تحفظ ناموس رسالت کیلئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔ اسلام کو دیس نکالا دینے کی کو ئی سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ ان خیالات کا اظہارعالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی ناظم نشرواشاعت مولانا عزیزالرحمن ثانی،قاری جمیل الرحمن اختر،قاری علیم الدین شاکر،مولاناعبدالشکورحقانی،مولانا سیدضیاء الحسن شاہ،مولانا عبدالنعیم،مولانا محبوب الحسن طاہر،قاری عبدالعزیز،مولانا سعیدوقار،مولانا قاری ظہورالحق،مولانا خالدمحمود و دیگر علماء نے خطبات جمعہ میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔

علماء نے کہا کہ مردان واقعے کو بنیاد بناکر توہین رسالت قانون میں تبدیلی کی اجازت نہیں دی جائے گی ۔مردان کے افسوسناک واقعہ کی آڑ میں قانونِ ناموسِ رسالت پر تنقید ناقابل قبول ہے۔حکومت عالمی دبائو مسترد کر کے قانونِ ناموسِ رسالت میں کسی بھی طرح کی تبدیلی نہ کرنے کا اعلان کرے۔ دین بیزار عناصر اور غیرملکی طاقتوں کے ایجنٹ قانونِ ناموسِ رسالت کو ختم کروانے کے لیے سرگرم ہو چکے ہیں ۔

تحفظ ناموس رسالت ﷺ کیلئے کسی قسم کی معمولی سی بھی تبدیلی قبول نہیں کریں گے ۔اسلام دشمن قوتوں کی یہ پرانی خواہش ہے کہ پاکستان کے آئین سے اسلامی دفعات کا خاتمہ ہوخاص طورپرناموس رسالت ایکٹ لادین اوربیرونی آقاؤں کے غلام طبقے کا پہلاہدف ہے لیکن یہ لوگ پاکستان کی اسلامی شناخت ختم کرنے میں کامیاب نہیں ہونگے۔انہوں نے کہا کہ جب بھی ختم نبوت یا ناموس رسالت کے حوالے سے کوئی واقعہ پیش آتا ہے توسیکولرقوتیں ناموس رسالت قانون پر حملہ آورہو جاتی ہیں تمام جماعتیں اس بات پرمتفق ہیں کہ اس قانون میں نہ کو ئی تبدیلی کی جاسکتی ہے اور نہ ہی اس کی ضرورت ہے اسلامیان پاکستان قانون تحفظ ناموس رسالت میںترمیم کی کوششوں کو بھرپورقوت سے ناکام بنایا جائے گا۔

تمام دینی طبقات متفقہ طورپراس سازش کا مقابلہ کریں گے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 21/04/2017 - 18:51:04

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں