سونمیانی کے قریب ڈامب میں سمندر 20 ایکڑ زمین نگل گیا
تازہ ترین : 1

سونمیانی کے قریب ڈامب میں سمندر 20 ایکڑ زمین نگل گیا

موسمیاتی تبدیلی، سمندر کی سطح میں اضافہ، انسانی غفلت اس تباہی کی ذمہ دار ہیں، ماہرین

سونمیانی کے قریب ڈامب میں سمندر 20 ایکڑ زمین نگل گیا
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اپریل2017ء)سونمیانی کے قریب ڈامب ولیج کو سمندر سے خطرہ لاحق ہوگیا،صرف تین دن کے اندر سمندر 20 ایکڑ زمین نگل گیا۔ماہرین کے مطابق موسمیاتی تبدیلی، سمندر کی سطح میں اضافہ اور انسانی غفلت اس تباہی کی ذمہ دار ہیں۔سمندر کنارے بسنے والو ں کو ہمیشہ ہی خطرات لاحق رہتے ہیں، حب کے ساحلی علاقوں میں ڈامب وہ علاقہ ہے جو سب سے زیادہ سمندر سے متاثر ہورہا ہے،13 ہزار سے زائد باسیوں کے مسکن کو سمندر 6 سے 8 سال کے دوران کافی نقصان پہنچا چکا ہے۔

ڈامب ولیج کے قریب سمندر میانی مور میں تیزترین لہریں 3میٹر فی سیکنڈ کے حساب سے بنتی ہیں، گزشتہ 3دن کے دوران اونچی اور طاقتور لہروں نے 20 ایکڑ زمین نگل لی ہے جس میں پاکستان کوسٹ گارڈز کے دفتر کے علاوہ 200 سے زائد دکانیں شامل ہیں۔گوادر اور پسنی کے بعد ڈامب کا یہ علاقہ سمندری خوراک کا سب سے بڑا سیکٹر ہے۔ماہرین کے مطابق موسمیاتی تبدیلی، سمندر کی سطح میں اضافہ اور انسانی غفلت اس تباہی کی ذمہ دار ہیں۔این آئی او کی ٹیم ڈامب ولیج میں ہونے والی تباہی کی سائنسی وجوہات کا جائزہ لے رہی ہے۔ماہرین کے مطابق مون سون میں سمندر میں طغیانی اور اونچی لہرو ں سے علاقے کو مزید نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 21/04/2017 - 15:23:48

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں