اسلام آباد کے 422 سرکاری سکولوں کو ’’گرین سکول‘‘ بنایا جائے گا
تازہ ترین : 1

اسلام آباد کے 422 سرکاری سکولوں کو ’’گرین سکول‘‘ بنایا جائے گا

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 فروری2017ء) ڈپٹی میئر اسلام آباد سیّد ذیشان علی نقوی نے کہا ہے کہ سرسبز و شاداب پاکستان کے خواب کو عملی جامہ پہنانے کی ایک کڑی کے طور پر اسلام آباد کے سرکاری شعبہ کے 422 سکولوں کو ’’گرین سکول‘‘ بنایا جائے گا۔ اس امر کا اظہار انہوں نے جمعرات کو یہاں شجرکاری مہم کا افتتاح کرتے ہوئے کیا۔ شجرکاری مہم کی افتتاحی تقریب میں مختلف سکولوں کے بچوں کی بڑی تعداد کے علاوہ مختلف شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والی شخصیات کی بڑی تعداد نے شرکت کی جس کا اہتمام پائیدار ترقی سے متعلق غیر سرکاری تنظیم ایس ڈی پی آئی اور پاکستان یوتھ فار کلائمیٹ نیٹ ورک (پی وائی سی این) نے وزارت ماحولیاتی تبدیلی کے اشتراک سے کیا تھا۔

شجرکاری کی اس مہم کا مقصد ’’گرین پاکستان‘‘ کے نام سے قومی شجرکاری مہم کو تقویت دینا تھا جس کا آغاز پاکستان کے تمام صوبوں، آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان میں ایک ساتھ کیا گیا ہے اور جس کے تحت ملک بھر میں 257 ملین درخت لگائے جانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔ ڈپٹی میئر اسلام آباد نے کہا کہ حکومت اور سول سوسائٹی کے اداروں کا قومی مقصد کیلئے مل کر کام کرنا ایک خوش آئند امر ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ توقع کی جانی چاہئے کہ نجی شعبہ بھی اپنی سماجی ذمہ داریوں کے تحت اس مقصد میں ہاتھ بٹانے کیلئے آگے آئے گا۔ جنگلات کی کٹائی اور اس باعث زہریلی گیسوں کے اخراج کی روک تھام کیلئے قائم ادارہ (آر ای ڈی ڈی) کی نمائندہ ماجیلا کلارک نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ان کا ادارہ جنگلات کے فروغ کی اہمیت کو اجا گر کرنے کی تمام کاوشوں میں ہاتھ بٹائے گا۔

انہوں نے کہا کہ آر ای ڈی ڈی وزارت ماحولیاتی تبدیلی کے ساتھ ملک کر اس ضمن میں پاکستان کیلئے پالسیی پر کام کر رہا ہے۔ ایس ڈی پی آئی کے شکیل احمد رامے نے کہا کہ پی وائی سی این اور ایس ڈی پی آئی اپنی اس کاوش کے ذریعے بہتر اور صاف ستھرے ماحول کیلئے درختوں کی اہمیت جو اجا گر کرنا چاہتے ہیں۔ ایس ڈی پی آئی نے پی وائی سی این اور سول سوسائٹی کے دوسرے اداروں کے ساتھ ملک کر پشاور، کوئٹہ، کراچی اور لاہور میں بھی شجرکاری مہم کی افتتاحی تقریبات کا انعقاد کیا اور ایک بہتر پاکستان کیلئے درختوں کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔
وقت اشاعت : 09/02/2017 - 16:49:26

اپنی رائے کا اظہار کریں