ترک صدر نے پاکستان کے 20کروڑ عوام اور امت کو ایک واضح پیغام اور نصب العین دیا ہے‘ ..
تازہ ترین : 1
ترک صدر نے پاکستان کے 20کروڑ عوام اور امت کو ایک واضح پیغام اور نصب العین ..

ترک صدر نے پاکستان کے 20کروڑ عوام اور امت کو ایک واضح پیغام اور نصب العین دیا ہے‘ سینیٹر سراج الحق

پاکستان اور ترکی کو انہوں نے دوممالک اور ایک امت کی جس سنہری مثال سے تعبیر کیا ہے وہ نہایت قابل تحسین ہے ‘ میڈیا سے گفتگو

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 نومبر2016ء) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے ترک صدر طیب اردوان کے دورہ پاکستان اور پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے تاریخی خطاب میں اسلام پر غیر متزلزل ایمان کے اظہار کوکو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ ترک صدر نے پاکستان کے 20کروڑ عوام اور امت کو ایک واضح پیغام اور نصب العین دیا ہے، اسلام کو اصل قوت قرار دیتے ہوئے ترک صدر نے کہا کہ اسلام ہمیں رنگ و نسل ،علاقائی اور مسلکوں کے تعصب سے نکال کرایک امت ہونے کا پیغام دیتا ہے ،خوشی غمی میں پاکستان کے ساتھ کھڑے ہونے کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے ترک صدر نے کشمیر پر پاکستانی عوام کے موقف کی مکمل حمایت کی ہے ،پاکستان اور ترکی کو انہوں نے دوممالک اور ایک امت کی جس سنہری مثال سے تعبیر کیا ہے وہ نہایت قابل تحسین ہے ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں شرکت کے بعد پارلیمنٹ کے باہر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ طیب اردوان ترکی میں نفاذ اسلام کے لئے یکسو ہیں ،ہمارے حکمرانوں کو ان سے سبق سیکھنا چاہئے ،پاکستان تو بنا ہی اسلام کے لئے تھا ،ہمارے حکمران اسلام دشمن قوتوں کو خوش کرنے کیلئے محترم شخصیات ، اسلامی ہیروز کے نام اور جہاد کو نصاب تعلیم سے نکال رہے ہیں اور اسلام سے شرما رہے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ آج ترک قوم اس لئے کامیاب اور ترقی و خوشحالی کی شاہراہ پر گامزن ہے کہ انہوں نے اسلام مخالف تمام ترسازشوں کو ناکام بنا دیا ہے اور وہ خلافت کی بحالی کیلئے پورے عزم کے ساتھ آگے بڑھ رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ طیب اردوان نے ہمارے حکمرانوں کو بھی یہ پیغام دیا ہے کہ اللہ تعالیٰ ہماری شہ رگ کے قریب ہے ،جب جہانوں کا خالق و مالک اتنا قریب ہوتو دشمن سے ڈرکر اس کی نافرمانی کرنے والوں کو اپنے رویہ پر سوچنا چاہئے اور مغرب کی بجائے اللہ کی غلامی کو اختیار کرنا چاہئے جوعزت و وقار کا اصل منبع ہے ۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے حوالے سے بھی طیب اردوان کا موقف بڑا واضح ہے کہ پاکستان اور عالم اسلام دہشت گردی کا شکار ہیں ،اس دہشت گردی کے پیچھے مغرب کا ہاتھ ہے ،مغرب نے دلائل کے میدان میں شکست کھانے کے بعد مسلمانوں پر غیر اعلانیہ جنگ مسلط کررکھی ہے ۔ پاکستان اور افغانستان عرصہ سے اس دہشتگردی کا شکار چلے آرہے ہیں ۔سینیٹر سراج الحق نے کشمیر پر ترک صدر کے واضح موقف کو سراہتے ہوئے کہا کہ طیب اردوان نے کشمیریوں کی دوٹوک حمایت کرکے پاکستانی اور کشمیری عوام کے دل جیت لئے ہیں اور ہمارے حکمرانوں کیلئے بھی ایک مثال قائم کی ہے کہ کشمیر پر بزدلانہ اور معذرت خواہانہ موقف کی بجائے جرأت مندانہ موقف اختیا رکیا جائے ۔

سینیٹر سراج الحق نے ترک صدر کی طرف سے پانچ سو پاکستانی طلباء کو پی ایچ ڈی کروانے کے اعلان کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہماری نئی نسل کو آگے بڑھنے اور تعلیم میں اپنا اور ملک و قوم کا نام روشن کرنے کابہترین موقع فراہم کیا ہے ۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ مولانا روم اور علامہ اقبال کی تعلیمات میں دنیا بھر کے مسلمانوں کو حضور ﷺ کا امتی اور امت واحدہ بننے کا پیغام دیا گیاہے ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 17/11/2016 - 20:00:24

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں